پاکستانی ایتھلیٹ ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپئن شپ میں چاندی کا تمغہ جیتنے میں کامیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پاکستان کے جیولین تھرور ایتھلیٹ ارشد ندیم نے ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپئن شپ میں چاندی کا تمغہ حاصل کر کے تاریخ رقم کر دی۔

ہنگری کے درالحکومت بڈا پسٹ میں ہونے والے ان مقابلوں میں ارشد ندیم کا یہ اعزاز ورلڈ ایتھلیٹکس چیمپئن شپ کے ایونٹ میں پاکستان کے لئے پہلا تمغہ ہے۔

پاکستانی ایتھلیٹ نے سات بار جیولین کو اپنی تمام تر قوت سے پھینکا جس میں ان کی سب سے بہتر کوشش 87.82 میٹر تک جا سکی۔

اس سے قبل جیولین تھرو کےکوالیفائنگ مقابلے میں قومی جیولین تھروور ارشد ندیم نے پہلی کوشش میں70.63 میٹر، دوسری کوشش میں81.53 میٹر کی تھرو پھینکی تاہم ان کی تیسری تھرو سب سے شاندار رہی جب وہ اسے 86.79 میٹر دور پھینکنے میں کامیاب رہے اور اپنے گروپ میں سرفہرست رہے۔

فائنل میں رسائی کے ساتھ ہی ارشد ندیم نے پیرس اولمپکس 2024 کے لیے بھی کوالیفائی کرلیا تھا۔

پاکستان کے نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے ارشد ندیم کی صلاحیت کی داد دیتے ہوئے اس موقع کو پوری قوم کے لئے خوشی اور فخر کا موقع قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں