دہشت گردوں اورغیر قانونی سرگرمیوں سے ریاست مکمل طاقت سے نمٹے گی،کورکمانڈرزکانفرنس

شرکاء کو قومی سلامتی کو درپیش چیلنجوں اور بڑھتے ہوئے خطرات سے نمٹنے کے لیے حکمتِ عملی کے بارے میں بریفنگ دی گئی:آئی ایس پی آر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان فوج کی اعلیٰ قیادت نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ معاشی ترقی، استحکام اور سرمایہ کاروں کے اعتماد میں رکاوٹ بننے والی تمام غیر قانونی سرگرمیوں کو روکنے میں حکومت کی ’’دل کھول کر‘‘ مدد کی جائے گی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق اس عزم کا اظہار جمعرات کو جنرل ہیڈ کوارٹرز (جی ایچ کیو) راول پنڈی میں 259 ویں کور کمانڈرز کانفرنس میں کیا گیا ۔شرکاء نے خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کی چھتری تلے سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے جاری کوششوں میں فوجی قیادت کی 'مکمل حمایت' کا اعادہ کیا۔

کورکمانڈرز کانفرنس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پاکستان کو غیرمستحکم کرنے کی کوشش کرنے والے دہشت گردوں، ان کے سہولت کاروں اور ان کی حوصلہ افزائی کرنے والوں سے ریاست مکمل طاقت کے ساتھ نمٹے گی۔

کانفرنس میں ملک کی موجودہ سکیورٹی کی صورت حال کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔شرکاء نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ریاستی اداروں اور عوام کے درمیان خلیج پیدا کرنے کے لیے مذموم پروپیگنڈا کرنے والوں کو مایوسی کے سوا کچھ حاصل نہیں ہوگا اور ان شاءاللہ ایسے عناصر مزید رسوائی کا شکار ہوں گے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے اس اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے تاجر برادری کو ڈالر کے تبادلے اور انٹر بینک نرخوں میں شفافیت لانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

شرکاء نے 6 ستمبر کو ملک بھر میں یومِ دفاع پاکستان بھرپور طریقے سے منانے پر پاک فوج کی جانب سے اپنی قابلِ فخر قوم کا شکریہ ادا کیا۔کانفرنس میں صوبہ خیبرپختونخوا میں ضم شدہ اضلاع اور بلوچستان کے سرحدی اضلاع میں پائیدار امن و ترقی پر بھی زور دیا گیا۔

شرکاء نے عزم کا اعادہ کیا کہ خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کے زیر نگرانی جاری معاشی سرگرمیوں کی مکمل حمایت کی جائے گی۔ایسی تمام سرگرمیاں جو معاشی استحکام اور غیرملکی سر مایہ کاری کو نقصان پہنچا سکتی ہیں،ان کے خاتمے کے لیے حکومت کی مکمل معاونت کی جائے گی۔

اعلامیے کے مطابق آرمی چیف نے آپریشنز کے دوران میں پیشہ ورانہ مہارت کے معیار کو برقرار رکھنے اور فارمیشنز کی تربیت کے دوران میں بہترین کارکردگی کے حصول پر زور دیا۔انھوں نے فوجیوں کی فلاح و بہبود اور حوصلہ برقرار رکھنے اور مسلسل توجہ دینے پر کمانڈرز کے کردار کی تعریف کی اور کہا کہ یہ فوج کی آپریشنل تیاری کی بنیاد ہے۔

کانفرنس کے شرکاء نے ہر قسم کے بالواسطہ اور بلاواسطہ خطرات کے خلاف پاکستان کی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے دفاع کے لیے پاک فوج کے عزم کا اعادہ کیا۔کانفرنس کے شرکاء نے مسلح افواج، قانون نافذ کرنے والے اداروں کے افسر اورجوان شہیدوں اور سول سوسائٹی کے شہداء کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا، جنھوں نے ملک کی حفاظت، سلامتی اور وقارکے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔

شرکاء نے کہا کہ ریاست پاکستان مسلح افواج کے شہداء اور ان کے اہلِ خانہ کو ہمیشہ احترام کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔اعلامیے کے مطابق کور کمانڈرز کانفرنس میں شہداء کے ایصال ثواب کے لیے فاتحہ خوانی بھی کی گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں