پی ٹی آئی رہنما پرویز الٰہی اڈیالہ جیل سے رہا، ایک اور مقدمے میں گرفتار

پاکستان تحریک انصاف کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی کی یکم جون کے بعد 12 ویں گرفتاری ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے صدر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی کو راولپنڈی جیل سے رہائی سے قبل لاہور ماسٹر پلان کرپشن کیس میں ایک روزہ راہداری ریمانڈ پر پنجاب اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ کے حوالے کر دیا، یہ ان کی یکم جون کے بعد 12 ویں مرتبہ گرفتاری ہے۔

پرویز الٰہی تحریک انصاف کے صدر ہیں، ان کی عمر 77 برس ہے۔ انہیں دل کا عارضہ بھی لاحق ہے، چار ماہ سے ان پر مسلسل ایک کے بعد ایک مقدمہ درج کیا جارہا ہے۔ انہیں گزشتہ روز اڈیالہ جیل سے رہا کرنے کا حکم جاری کیا گیا تھا۔ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سابق وزیراعلی پر بدعنوانی کے چار مقدمات درج ہیں۔ پرویز الٰہی کو اسلام آباد کی مقامی عدالت میں پیش کر کے راہداری ریمانڈ حاصل کیا گیا۔

سابق وزیراعلی کو آج شام تک محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب کے صدر دفتر لاہور منتقل کر دیا جائے گا۔ اُن کے وکیل سردار عبدالرازق نے کہا ہے کہ پرویز الٰہی کو جوڈیشل کمپلیکس پر حملے کے مقدمے میں ضمانت پر رہا کرنے کا حکم تھا اب ایک کوئی اور مقدمہ لاہور میں درج کیا گیا۔

ترجمان اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ پنجاب کی جانب سے جاری بیان کے مطابق چوہدری پرویز الہٰی کو لاہور ماسٹر پلان کرپشن کیس میں راولپنڈی سے گرفتار کیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا کہ چوہدری پرویز الہیٰ نے لاہور ماسٹر پلان منصوبہ میں مالی فوائد کے لیے جعل سازی کی اور لاہور ماسٹر پلان میں رد وبدل کرکے اپنی زمینیں لاہور میں شامل کرنے کی کوشش کی، ماسٹر پلان میں ردوبدل کے لیے کنسلٹنٹ فرم کی جعلی مہریں اور مونوگرام استعمال ہوا۔

ترجمان اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے مزید کہا کہ چوہدری پرویز الہیٰ نے دارلہندسہ/کنسلٹنٹ کی طرف سے جمع کروائے گئے لاہور ماسٹر پلان میں جعل سازی کی، کنسلٹنٹ کے ترتیب دیے گئے ماسٹر پلان میں جعلی کاغذات کا اضافہ کیا گیا۔

بیان کے مطابق زرعی زمین کو کمرشل اور رہائشی میں تبدیل کرکے اربوں روپے کا فائدہ اٹھانے کی کوشش کی، سابق وزیر اعلی چوہدری پرویز الٰہی نے مالی مفاد کے لئے عہدے اور دفتر کا ناجائز استعمال کیا، انہوں نےاختیارات کا ناجائزاستعمال کرتے ہوئے متعلقہ افسران سے منصوبے کی منظوری کروائی۔

بیان میں بتایا گیا کہ چوہدری پرویز الہیٰ کے خلاف لاہور ماسٹر پلان میں جعلسازی پر اینٹی کرپشن لاہور میں مقدمہ درج ہے، لاہور ماسٹر پلان کرپشن کیس میں ملوث تمام ملزمان کو گرفتار کیا جائے گا، اینٹی کرپشن کرپٹ اور بدعنوان عناصر کے خلاف بلاامتیاز کاروائیاں کر رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں