نگراں وزیر اعظم یو این میں کشمیر اور فلسطین کا مسئلہ اٹھائیں گے: ترجمان دفتر خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا کہ نگراں وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ امریکہ میں اقوام متحدہ اجلاس کے لیے نیویارک میں موجود ہیں، 22 ستمبر کو جنرل اسمبلی سے خطاب کریں گے اور مقبوضہ کشمیر اور مسجد الاقصٰی کا مسئلہ اٹھائیں گے۔

اسلام آباد میں ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے بدھ کے روز ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے کہا ’’کہ نگراں وزیر اعظم یو این جنرل اسمبلی اجلاس میں پاکستان کے موقف سے آگاہ کریں گے، مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم اور فلسطین میں ہونے والی اسرائیلی جارحیت کی مذمت کریں گے۔‘‘

انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کا سلسلہ جاری ہے، پاکستان مسئلہ کشمیر کا حل یو این کی قراردادوں کے مطابق چاہتا ہے۔ پاکستان ہمیشہ مقبوضہ کشمیر کی مظلوم عوام کی آواز بنتا رہے گا اور ہر فورم پر ان کے لیے آواز اٹھائے گا۔

ترجمان دفتر خارجہ نے فلسطین میں جاری اسرائیلی جارحیت پر پاکستان کا موقف بتاتے ہوئے کہا ’’کہ پاکستان مسجد الاقصٰی پر اسرائیلی جارحیت کی بھرپور مذمت کرتا ہے۔ پاکستان اسرائیل کی جانب سے رات گئے مسجد الاقصٰی اور غزہ میں مسلمانوں پر حملوں کی مذمت کرتا ہے۔ عالمی برادری کو آگاہ کرنا ضروری ہے کہ اسرائیلی جارحیت خطے میں امن واستحکام کے لیے شدید خطرہ ہے۔‘‘

ممتاز زہرہ بلوچ نے کہاکہ نگراں وزیر اعظم آج موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے ہونے والے اجلاس میں شرکت کریں گے، اس سے قبل انوار الحق کاکڑ نے ایشیائی سوسائٹی اجلاس سے کلیدی خطاب بھی کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں