سعودی ولی عہد کا پورٹریٹ بنانے والے پاکستانی مصورکے لیے عمرے کے ٹکٹ کا تحفہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نواف بن سعید المالکی نے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی تصویر بنانے والے پاکستانی مصورعمرجرال کو عمرہ کی سعادت حاصل کرنے کے لیے سفری ٹکٹ تحفے میں دیے ہیں۔

تینتیس سالہ عمر جرال دماغی فالج (سی پی) میں مبتلا ہیں۔یہ دماغی بیماری کسی شخص کے اعصابی نظام اور افعال میں ہم آہنگی کو متاثر کر سکتی ہے، پٹھوں کی طاقت میں کمی کا باعث بن سکتی ہے۔یہ حرکت کا مستقل عارضہ ہے اور یہ متاثرہ فرد کے اعصابی حرکی نظام اور افعال کے درمیان ہم آہنگی اور رابطہ کاری کے نظام کو متاثر کرسکتا ہے۔اس کے نتیجے میں اعصاب مضبوط نہیں ہوتے اورتوازن اور حرکت کو کنٹرول کرنے والے دماغ کے بعض حصوں کی بے قاعدہ انداز میں نشوونما ہوتی ہے جو فرد میں جھٹکوں کا سبب بنتی ہے۔

اس دماغی مرض کا شکار لاہور سے تعلق رکھنے والے نوجوان پاکستانی مصور عمرجرال دوسروں سے بات چیت کے لیے کمپیوٹر کا استعمال کرتے ہیں۔انھوں نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سمیت دنیا بھر کے مسلم رہ نماؤں کی تصویریں بنائی ہیں۔

سفیر نواف بن سعید المالکی کی عمر جرال سے ملاقات لاہور میں سعودی عرب کے 93 ویں قومی دن کے موقع پر ایک تقریب میں ہوئی۔ سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر 'عربی میں پاکستان' کے عنوان سے ایک اکاؤنٹ سے شیئر کی گئی تصویر میں المالکی کو سعودی ولی عہد کی پینٹنگ ہاتھ میں لیے جرال کے ساتھ کھڑے دیکھا جا سکتا ہے۔

اس تصویر کے ساتھ لکھا گیا ہے:عمر نے سعودی ولی عہد شہزادہ Mohammed_bin_Salman کی تصویر بنائی تھی اور سعودی سفیر نے انھیں عمرہ کی ادائی کے لیے سفری ٹکٹ دیے ہیں۔

اس خصوصی پاکستانی مصور نے متحدہ عرب امارات کے وزیر اعظم شیخ محمد بن راشد آل مکتوم، دبئی کے ولی عہد شیخ حمدان بن محمد اور ترک صدر رجب طیب ایردوآن کی تصاویر بھی بنائی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں