نواز شریف کی گرفتاری کے لیے تیار ہیں: نگران وفاقی وزیر داخلہ

رانا ثناء اللہ نے نگران وزیر داخلہ کا نواز شریف کی گرفتاری سے متعلق بیان حد سے تجاوز قرار دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

نگران وفاقی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے کہا ہے کہ نواز شریف کی گرفتاری کے لیے تیار ہیں، ایک ملزم کو جہاز سے گرفتار کرنے کے لئے کوئی بڑی فورس نہیں چاہیے ہوتی۔

ادھر دوسری جانب سابق وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے اپنے رد عمل میں کہا ہے کہ سرفراز بگٹی نواز شریف کے بارے میں بیان بازی سے اپنا قد بڑھانے کی کوشش نہ کریں۔

ان خیالات کا اظہار سرفراز بگٹی نے نجی ٹی وی چینل ’’اے آر وائے نیوز‘‘ کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف ماضی میں بھی بیٹی کے ساتھ گرفتار ہونے آئے تھے۔

انھوں نے کہا کہ ایئرپورٹ حساس جگہ ہے وہاں ویسے بھی مجمع کو اجازت نہیں دیں گے۔ نوازشریف کو عدالت سے ضمانت نہیں ملی تو گرفتار کریں گے۔ میرے خیال میں نواز شریف خود بھی گرفتار ہونا ہی چاہیں گے۔

رانا ثناء اللہ کا رد عمل

دریں اثنا پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر اور سابق وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ خاں نے نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی کے بیان کو "حد سے تجاوز" قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سرفراز بگٹی صاحب بیان دینے سے پہلے وزیرِ داخلہ شیخ رشید کا انجام دیکھ لیں۔

رانا ثناء اللہ نے مزید کہا کہ نواز شریف جیلوں اور فورس کا سامنا کر چکے ہیں۔ سرفراز بگٹی نواز شریف کی فکر چھوڑیں اپنے کام پہ توجہ دیں۔ نواز شریف پر اللہ تعالیٰ کی رحمت اور نیچے عوام کی فورس ہے۔

سابق وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف سازش کا خمیازہ عوام اور ملک نے بھگتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے خلاف جھوٹے کیس بنا کر ملک کے ساتھ اور عوام کے ساتھ دشمنی کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے ائیر پورٹ سے 21 اکتوبر کو کہاں جانا ہے یہ وزیرِ داخلہ وفاق کا فیصلہ نہیں ہو گا یہ عوام کا فیصلہ ہو گا۔ نواز شریف ہمیشہ کی طرح عدالتوں میں قانون کے مطابق تقاضے پورے کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں