عمران خان اور شاہ محمود قریشی کو سائفر کیس میں چار اکتوبر کو عدالت میں پیشی کی ہدایت

پی ٹی آئی کے وکیل کی جانب سے سائفرکیس کی نقول فراہم کرنے کی دائر درخواست منظور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آفیشل سیکرٹ ایکٹ خصوصی عدالت نے ملزمان کے باقاعدہ ٹرائل کا آغاز کردیا اور چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی کو نوٹس جاری کردیئے۔

سائفر کیس کا چالان جمع ہونے کے بعد ایک اور بڑی پیش رفت سامنے آئی ہے، آفیشل سیکرٹ ایکٹ خصوصی عدالت نے باقاعدہ ٹرائل کا آغاز کردیا ہے۔ جسٹس ابوالحسنات ذوالقرنین نے ریمارکس دیئے کہ گواہان کے بیانات ملزمان کو نوٹس جاری کرنے کے لیے کافی ہیں، چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی اڈیالہ جیل میں قید ہیں، سپرنٹنڈٹ اڈیالہ جیل چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو چار اکتوبر کو عدالت پیش کریں۔

عدالت نے چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو چار اکتوبر کے لیے نوٹس جاری کردیئے ہیں اور دونوں ملزمان کو عدالت میں پیش کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ پی ٹی آئی کے وکیل خالد یوسف کی جانب سے دائر سائفرکیس کی نقول فراہم کرنے کی درخواست دی گئی جو منظور کر لی گئی۔ عدالتی عملے نے وکیل کو بتایا کہ سائفر کیس کی نقول فراہم کرنے کے لیے ایک دن درکار ہو گا، چالان کی نقول پرسوں فراہم کر دی جائیں گی۔

یاد رہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان اور شاہ محمود قریشی سائفر گمشدگی کیس میں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں موجود ہیں۔ 30 ستمبر کو وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے کیس سے متعلق چالان آفیشل سیکرٹ ایکٹ خصوصی عدالت میں جمع کرایا جس میں چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی قصوروار قرار دیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں