غیر ملکی مبصرین کو پاکستان میں انتخابی عمل کے مشاہدے کی دعوت کون دے گا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الیکشن کمیشن نے پاکستان میں آئندہ عام انتخابات کے لیے غیر ملکی مبصرین کے پاکستان آنے کے انتظامات سے متعلق دفتر خارجہ سے رابطہ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وزارت خارجہ کو فوری طور پر تحریر کیا جائے کہ وہ بین الاقومی مبصرین کو آئندہ عام انتخابات کی شفافیت کے مشاہدہ کے لئے مدعو کرنے کے سلسلے میں تمام ضروری اقدامات کرے۔

اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ غیر ملکی مبصرین کی جن تنظیموں نے الیکشن کمیشن کو آئندہ عام انتخابات کے دوران انتخابی عمل کے مشاہدے کی درخواست کی ہے ان کے کیس کو فوری طور پر پراسس کیا جائے۔

عالمی مبصرین کے لیے ضابطہ اخلاق کی منظوری بھی دی ہے اور اسے فوری طور پر شائع کرنے کی اجازت دی ہے۔ الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات کے انتظامات کا بھی جائزہ لیا اور اس پر اطمینان کا اظہار کیا اور حکم دیا کہ الیکشن سے متعلق تمام امور شیڈول کے مطابق مکمل کئے جائیں۔

کمیشن نے سیکریٹری الیکشن کمیشن کی سربراہی میں 16 اکتوبر کو ایک اجلاس بلانے کی بھی ہدایت کر دی ہے۔

اس میں وزارت خارجہ، وزارت داخلہ اور دیگر اداروں کے سینیئر افسران شریک ہوں گے اور عالمی مبصرین کے حوالے سے آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔

اس اجلاس میں الیکشن کمیشن نے تمام سٹیک ہولڈرز بشمول وزارت خارجہ، وزرات داخلہ اور دیگر اداروں سے فوکل پرسنز کی تفصیل مانگ لی ہے۔ اس کے علاوہ کمیشن نے صوبائی سطح پر الیکشن کمیشن کی طرف سے جوائنٹ صوبائی الیکشن کمشنر ایڈمن کو چاروں صوبوں میں فوکل پرسنز مقرر کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں