وفاقی کابینہ نے حج پالیسی 2024 کی منظوری دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

وفاقی کابینہ نے وزارت مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی کی سفارش پر حج پالیسی 2024کی منظوری دے دی۔ حج 2024کے لئے پاکستان کے لئے مختص کوٹے کے تحت ایک لاکھ 79 ہزار 210 افراد فرائض حج سرانجام دے سکیں گے۔

پیر کو اسلام آباد میں نگراں وزیر اعظم کی زیرِ صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد نگران وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات مرتضی سولنگی نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ’حج 2024 کے لیے روڈ ٹو مکہ پروجیکٹ کی سہولت اسلام آباد ایئرپورٹ پر دستیاب ہو گی، 20 سے 25 دنوں کے قیام کا حج پیکیج بھی متعارف کرایا جائے گا جس کی مالیت کا تعین بعد میں کیا جائے گا۔‘

انہوں نے بتایا کہ 38 سے 42 دنوں کا حج پیکیج جنوبی ریجن کے لیے 10 لاکھ 65 ہزار روپے اور شمالی ریجن کے لیے 10 لاکھ 75 ہزار روپے مقرر کیا گیا ہے۔ یہ پیکج گذشتہ سال کے مقابلے میں ایک لاکھ روپے کم ہے۔‘

حج پالیسی کی جزئیات سے باخبر ذرائع کا دعویٰ ہے کہ حج سکیم کے تحت ڈالر کا بوجھ کم کرنے کے لیے آئندہ برس بھی سپانسر شپ سکیم جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ آئندہ برس حج پر 28 کروڑ ڈالر خرچ ہوں گے۔ سپانسر شپ سکیم کے تحت 10 ہزار عازمین فریضہ حج ادا کر سکیں گے۔

پالیسی کے مطابق سپانسر شپ سکیم میں حج اخراجات کی رقم ڈالر میں وصول کی جائے گی۔ سپانسر شپ سکیم کے درخواست دہندہ قرعہ اندازی سے مستثنیٰ ہوں گے۔

سنہ 2024 کے حج کے لیے پاکستان کا حج کوٹہ ایک لاکھ 79 ہزار 210 ہے۔ 50 فیصد کوٹہ سرکاری اور 50 فیصد نجی حج سکیم کے لیے مختص ہو گا۔

سنہ 2024 میں مسافروں کے لیے حج کے تجربے کو بہتر بنانے کے لیے، وفاقی حکومت نے حجاج کے لیے سفر کو مزید قابل رسائی، آسان اور آرام دہ بنانے کے لیے 20 سے 25 دن کا مختصر حج پروگرام متعارف کرایا ہے۔

پالیسی کے تحت سب کے لیے بغیر کسی رکاوٹ کے حج کے تجربے کو یقینی بنانے کے لیے سرکاری حج سکیم میں 90 ہزار سے زائد عازمین کو رہائش فراہم کرنے کا امکان ہے۔

اس اقدام کا مقصد بھیڑ کو کم کرنا اور اس مقدس سفر پر جانے والوں کے لیے آسانیاں پیدا کرنا ہے۔ حجاج کو اب مدینہ منورہ میں چار سے آٹھ دن کی مدت کے لیے اپنی رہائش کا انتخاب کرنے کی سہولت ہو گی۔

ہر حاجی کو خصوصی طور پر ڈیزائن کیا گیا ایک بیگ ملے گا جس میں پاکستانی پرچم، آسانی سے شناخت کے لیے ایک کیو آر کوڈ، اور متعلقہ معلومات ہوں گی۔

اس کے علاوہ حکومت حج درخواستوں کے آن لائن رجسٹریشن کے لیے ایک مخصوص موبائل ایپ شروع کرنے کا بھی سوچ رہی ہے۔ یہ ایپ سے حج کے انتظامی پہلوؤں کو بہتر کرے گا، جس سے عازمین کے لیے درخواست دینے اور اپنے سفر کا انتظام کرنے میں آسانی ہو گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں