شمالی وزیرستان میں سکیورٹی فورسز کی گاڑی باردوی سرنگ سے ٹکرانے سے دو جوان شہید

شہداء میں لانس نائیک احسن بادشاہ اور ساجد حسین شامل ہیں: آئی ایس پی آر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

شمالی وزیرستان میں سکیورٹی فورسز کے قافلے کی گاڑی دہشت گردوں کی نصب کردہ باردوی سرنگ سے ٹکرا گئی، دھماکے کے نتیجے میں پاک فوج کے دو جوان شہید ہو گئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق شمالی وزیرستان کے علاقے رزمک میں سکیورٹی فورسز کے قافلے کی گاڑی دہشت گردوں کی نصب کردہ آئی ای ڈی سے ٹکرا گئی، جس کے نتیجے میں پاک فوج کے 2 جوان جام شہادت نوش کر گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق شہید ہونے والوں میں کرک کے 33 سالہ لانس نائیک احسان بادشاہ اور کرم کے 30 سالہ لانس نائیک ساجد حسین شامل ہیں۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ علاقے میں موجود کسی بھی دہشت گرد کے خاتمے کے لئے سینی ٹائزیشن آپریشن بھی کیا گیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق سکیورٹی فورسز دہشت گردی کی لعنت کو ختم کرنے کے لیے پرعزم ہیں، ہمارے بہادر جوانوں کی یہ قربانیاں ہمارے عزم کو مزید مضبوط کرتی ہیں۔


فوجی قافلے پر دہشت گرد حملے کی مذمت

نگراں وزیرِاعظم انوار الحق کاکڑ نے شمالی وزیرستان کے علاقے رزمک میں پاک فوج کے قافلے پر دہشت گردوں کے حملے کی مذمت کی ہے۔

نگراں وزیراعظم نے 2 جوانوں کی شہادت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔

انوار الحق کاکڑ نے شہید لانس نائیک احسان بادشاہ اور لانس نائیک ساجد حسین کے اہلخانہ سے اظہارِ ہمدردی کیا اور شہداء کی بلندیِ درجات اور سوگواران کے لیے صبر جمیل کی دعا بھی کی۔

نگراں وزیرِاعظم نے کہا کہ دہشت گردی کے ناسور کے ملک سے خاتمے تک اس کے خلاف جنگ جاری رکھیں گے، پاک فوج اوراداروں کی ملک کی بقاء کی خاطر قربانیاں ناقابل فراموش ہیں، مجھ سمیت پوری قوم کو اپنے شہداء اور ان کے اہلِ خانہ پر فخر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں