ڈی آئی خان میں تھانہ درابن پر دہشت گردوں کا حملہ، 4 پولیس اہلکار شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ڈیرہ اسماعیل خان میں تھانہ درابن پر دہشت گردوں کے حملے میں چار پولیس اہلکار جان سے گئے جبکہ 18 زخمی ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق منگل کی علی الصبح پیش آنے والے اس واقعے میں دہشت گردوں نے تھانے کے باہر دھماکہ کیا جس کے بعد دو اطراف سے فائرنگ کی جو کئی گھنٹوں تک جاری رہی۔

وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

بیان میں وزیر داخلہ نے کہا کہ پوری قوم دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سکیورٹی فورسز کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔

حکام کے مطابق حملہ صبح تقریباً تین بجے کے قریب ہوا جس میں عمارت کا ایک حصہ بھی منہدم ہوا ہے۔

ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ عمارت کا ایک حصہ منہدم ہونے سے کچھ افراد نیچے دب گئے تھے جنہیں نکال لیا گیا ہے۔

دھماکے سے نزدیک عمارتوں کو بھی جزوی نقصان پہنچا ہے۔

پولیس حکام نے مزید بتایا کہ فائرنگ کا سلسلہ کئی گھنٹے جاری رہنے کے بعد بند ہو گیا ہے اور علاقے میں کلین اپ آپریشن جاری ہے۔

ڈی آئی خان کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے جبکہ محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا کی ہدایت پر تحصیل درابن میں تعلیمی ادارے آج کے لیے بند کر دیے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں