سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے گھر پر دستی بم سے حملہ، دو پولیس اہلکار زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سابق چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کے گھر پر دستی بم سے حملہ ہوا ہے۔

پولیس کے مطابق لاہور میں ثاقب نثار کے گھر ہونے والے دستی بم حملے میں سکیورٹی پر مامور دو پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

گھر کے گیراج میں ہونے والے دھماکے کی وجہ سے گھر کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے ہیں۔

واقعے کے بعد پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی ہے اور تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ دھماکا کس نوعیت کا تھا۔

دوسری جانب نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے ثاقب نثار نے کہا ہے کہ ہم گھر کے اندر بیٹھے ہوئے تھے تو زوردار دھماکے کی آواز آئی اور جب باہر آئے تو پولیس اہلکار زخمی پڑے تھے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس تفتیش کر رہی ہے کہ دھماکہ کرنے والے لوگ کون تھے۔

واضح رہے میاں ثاقب نثار 31 دسمبر 2016 سے 17 جنوری 2019 تک چیف جسٹس آف پاکستان کے عہدے پر فائز رہے۔

اس سے قبل آج کے روز ہی راولپنڈی میں اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر پر فائرنگ کی اطلاعات سامنے آئی تھیں تاہم بعد میں راولپنڈی پولیس نے تردید کرتے ہوئے کہا کہ نشے میں دھت ایک لڑکے نے ہوائی فائرنگ کی تھی اس کا کسی شخصیت سے تعلق نہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں