نگران حکومت کا الیکشن معاملات سے کوئی تعلق نہیں، مرتضیٰ سولنگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

نگران وفاقی وزیر اطلاعات، نشریات و پارلیمانی امور مرتضیٰ سولنگی نے کہا ہے کہ الیکشن سے متعلق معاملات میں صرف الیکشن کمیشن کا عمل دخل ہو سکتا ہے، نگران حکومت کا ان معاملات سے کوئی تعلق نہیں، پرامن احتجاج ہر شہری کا حق ہے، سڑکیں بند کرنا، ریڈ زون میں داخل ہونا، پولیس پر حملے اور پتھرائو کرنا پرامن احتجاج کے دائرہ سے باہر ہے جس کی کسی کو اجازت نہیں۔ ہفتہ کو ”92 نیوز“ کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے سب سے زیادہ امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے، کاغذات نامزدگی مسترد یا منظور ہونا آئینی عمل کا حصہ ہے، الیکشن سے متعلق معاملات میں صرف الیکشن کمیشن کا عمل دخل ہو سکتا ہے،

نگران حکومت کا ان معاملات سے کوئی تعلق نہیں، آئینی ادارے اپنی حدود میں رہ کر کام کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا کام الیکشن کمیشن کی مدد اور اسے مالی و انتظامی سہولت فراہم کرنا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ تنقید کرنے کے حق سے کسی کو محروم نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی مالی و انتظامی ضرورت پوری کر رہے ہیں، الیکشن کمیشن کو پہلے 10 ارب روپے جاری کئے گئے، اس کے بعد 17 ارب 40 کروڑ روپے دیئے گئے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی ایک رجسٹرڈ سیاسی جماعت ہے، ہم اپنے ایڈیٹوریل ضابطہ اخلاق کے تحت تمام جماعتوں اور ارکان کو مناسب کوریج فراہم کرتے ہیں۔ سرکاری میڈیا پر تمام رجسٹرڈ سیاسی جماعتوں کو بلا امتیاز مناسب کوریج دی جا رہی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بلوچستان سے آئے ہوئے مظاہرین سے مذاکرات کے پہلے مرحلے میں تمام بچوں اور خواتین کو رہا کیا گیا، دوسرے مرحلے میں 163 مرد حضرات کو رہا کیا گیا جبکہ تیسرے مرحلے میں بقیہ 34 افراد کو بھی رہا کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پرامن احتجاج ہر شہری کا حق ہے لیکن سڑکیں بند کرنا، ریڈ زون میں داخل ہونا، پولیس پر حملے اور پتھرائو کرنا پرامن احتجاج کے دائرہ سے باہر ہے جس کی کسی کو اجازت نہیں، قانون سب کے لئے برابر ہے۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ انتخابات 8 فروری 2024ءکو ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں