پاکستان میں بیرون ملک سے آنے والے منتخب مسافروں کے کرونا ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر [این سی او سی] نے دنیا بھر میں کووڈ کے نئے ویرئینٹ کے پھیلنے کے سبب بیرون ملک سے آنے والے منتخب مسافروں کی کرونا ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔

قومی ادارہ صحت کے حکام کے مطابق این سی او سی نے بیرون ملک سے آنے والے 2 فیصد مسافروں کی کرونا ٹیسٹنگ کا فیصلہ کیا جس کا مقصد دنیا بھر میں پھیلے گئے کرونا کے نئے ویرینٹ جے این ون کی روک تھام کرنا ہے۔

اس سے قبل ادارے نے ایڈوائزری جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ جے این.1 کو ویرینٹ آف انٹرسٹ (وی او آئی) کے طور پر دیکھا جا رہا ہے اور بنیادی طور پر بی اے.2.86 اومیکرون ویریئنٹ کی ایک قسم ہے۔ کووڈ-19 وائرس، سب سے پہلے اگست 2023 میں امریکی-سی ڈی سی کی طرف سے رپورٹ کیا گیا تھا تاہم حالیہ ہفتوں میں، جے این.1 بہت سے ممالک میں رپورٹ ہوا ہے اور عالمی سطح پر اس کا پھیلائو تیزی سے بڑھ رہا ہے۔

حکام نے کہا بتایا کہ ائیرپورٹس پر بیرون ملک سے آنے والے 2 فیصد مسافروں کی لازمی کووڈ ٹیسٹنگ ہوگی، کووڈ ٹیسٹنگ کے لئے ریپڈ ڈائیگنوسٹک کٹس قومی ادارہ برائے صحت فراہم کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں