فری لانسرز اب اپنی ادائیگی پے پال کے ذریعے وصول کرسکیں گے، ڈاکٹر عمر سیف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے نگران وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ٹیلی کام ڈاکٹر عمرسیف نے اعلان کیا ہے کہ پاکستانی فری لانسرز اب پے پال سے با آسانی اپنے بینک اکاؤنٹس میں رقوم وصول کر سکیں گے۔

خبر رساں ایجنسی اے پی پی نے وزیر ڈاکٹر عمر سیف کے ویڈیو پیغام کے حوالے سے بتایا ہے کہ فری لانسرز کا یہ دیرینہ مطالبہ تھا کہ پاکستان میں ادائیگی کی آسانی کے لیے پے پال تک رسائی حاصل کی جائے۔

ڈاکٹر عمر سیف نے کہا کہ فری لانسرز کو پے پال اکاؤنٹ کھولنے کی ضرورت نہیں ہو گی۔ انہوں نے واضح کیا کہ پے پال خود پاکستان نہیں آ رہا ہے لیکن کمپنی کے ساتھ ایک معاہدہ طے پا گیا ہے جس کے تحت ترسیلات زر، پے پال تیسرے فریق کے ذریعے منتقل کرے گا۔ بیرون ملک سے لوگ اپنے پے پال اکاؤنٹس سے ادائیگی کریں گے اور فنڈز فوری طور پر فری لانسرز کے اکاؤنٹس میں جمع کر دیے جائیں گے۔

نگران وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی کا کہنا تھا نئی اسپیس ٹیکنالوجی کے باعث نجی کمپنیاں پاکستان آ کر لوگوں کو کمیونیکیشن مہیا کر سکیں گی۔ انہوں نے کہا کہ سیٹلائٹ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی تیزی سے ترقی کر رہی ہے اور دنیا کی بہت سی نجی کمپنیاں کم مدار والے سیٹلائٹس کے ذریعے مواصلاتی خدمات فراہم کرنا چاہتی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نجی شعبے میں اس حوالے سے کافی ترقی ہوئی ہے، اب پاکستان میں مواصلاتی خدمات سیٹلائٹ کے ذریعے فراہم کرنا ممکن ہو گیا ہے اور نجی شعبے کے پاس یہ ٹیکنالوجی موجود ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں