سکیورٹی خدشات، اسلام آباد کی پانچ یونیورسٹیوں کو بند کر دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں سکیورٹی کی صورتحال کے سبب انتظامیہ نے اسلام آباد کی پانچ جامعات کو تاحکم ثانی بند کردیا گیا۔

سکیورٹی اداروں نے اسلام آباد میں کچھ تعلیمی اداروں پر حملوں کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے اس وقت پانچ یونیورسٹیز کو بند کیا ہے۔ تھرٹ الرٹ کے کے تحت قائداعظم یونیورسٹی، بحریہ یونیورسٹی، ایئر یونیورسٹی نینشل ڈیفنس یونیورسٹی اور نمل یونیورسٹی تا حکم ثانی بند رہیں گی۔

تھریٹ الرٹ کے حوالے سے اسلام آباد کے نواح میں رات گئے سکیورٹی اداروں نے سرچ آپریشن بھی کیے ہیں تاہم ان میں کسی کو گرفتار کرنے یا نہ کرنے کے حوالے سے اطلاعات سامنے نہیں آ سکیں۔

دوسری جانب آئی جی اسلام آباد اکبر ناصر خان پولیس نے پیر کو اپنے ایک ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ ’اسلام آباد میں سکیورٹی اور امن عامہ کے حالات قابو میں ہیں۔ اسلام آباد میں اس وقت غیرقانونی اجتماع پر پابندی ہے۔ کچھ لوگ جو ایسے اجتماع کرتے ہیں ہم انہیں منع بھی کرتے ہیں، اور اس کے باوجود انہیں سکیورٹی فراہم کرتے ہیں۔ لیکن سکیورٹی کی فراہمی دوطرفہ عمل ہے۔ اس میں آپ سب کا تعاون بھی شامل ہے۔‘

اس وقت اسلام آباد میں ایسی صورتحال نہیں ہے کہ جس سے معمول کی زندگی متاثر ہو۔ اس وقت حالات ایسے نہیں ہیں کہ آپ کسی بھی خوف کی وجہ سے کالجر ، سکولز یا اپنے معلومات زندگی میں کوئی تبدیلی لائیں۔

تھریٹ الرٹ میں کالعدم تنظیم کی جانب سے جامعات پر حملوں بشمول خودکش حملوں کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں