ڈی آئی خان: رات گئے دہشت گردوں کا تھانے پر حملہ، 10 پولیس اہلکار شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

خیبرپختونخوا کے علاقے ڈیرہ اسماعیل خان کی پولیس کا کہنا ہے پیر کی صبح ڈیرہ اسماعیل خان کی تحصیل داربن میں تھانے پر شدت پسندوں کے حملے میں دس پولیس اہلکار جان سے گئے جبکہ چھ زخمی ہو گئے۔

ڈیرہ اسماعیل خان پولیس کے مطابق رات تین بجے نامعلوم حملہ آوروں نے بھاری ہتھیاروں سے پولیس تھانے پر حملہ کیا۔

پولیس کے مطابق خیبر پختونخوا کے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کے پولیس سٹیشن چودہوان پر پولیس کے مطابق شدت پسندوں کے حملے میں 10 پولیس اہل کار جان سے گئے ہیں جبکہ چھ زخمی ہیں۔

پولیس کے مطابق پولیس اہلکاروں اور دہشت گردوں کے درمیان ڈھائی گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا، دہشت گردوں کی فائرنگ سے 10 پولیس اہلکار شہید جبکہ چھ اہل کار زخمی ہو گئے، زخمیوں اور لاشوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

پولیس لائن سے بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر علاقے کو گھیرے میں لے لیا، تھانہ چودہوان کی حدود میں سرچ آپریشن جاری ہے۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق حملے میں شہید ہونے والے پولیس اہل کاروں میں محمد اسلم، غلام فرید، محمد جاوید، محمد ادریس، محمد عمران، صفدر، اے ایس آئی کوثر، احترام سید، رفیع اللہ اور حمید الحق شامل ہیں۔

نگران وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا جسٹس (ریٹائرڈ) سید ارشد حسین شاہ نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے پولیس اہل کاروں کی شہادت پر اظہار افسوس کیا۔

جسٹس (ریٹائرڈ) سید ارشد حسین شاہ نے شہدا کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ صوبے میں امن کے لیے پولیس نے لازوال قربانیاں دی ہیں، بزدلانہ واقعات سے پولیس کے حوصلے پست نہیں ہوں گے، حکومت اور پوری قوم پولیس کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

یاد رہے کہ 12دسمبر 2023 کو دہشت گردوں نے ڈی آئی خان میں تھانہ درابن پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں تین پولیس اہلکار جاں بحق ہو گئے، دہشت گردوں نے بارود سے بھری گاڑی تھانے کے مین گیٹ سے ٹکرا دی تھی، فائرنگ سے 16 اہلکار زخمی بھی ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں