پشین اور قلعہ سیف اللہ میں حالیہ بم دھماکوں میں ملوث داعش جنگجو ہلاک : ترجمان پاک فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کی فوج نے صوبہ بلوچستان کے شہروں پشین اور قلعہ سیف اللہ میں عام انتخابات سے ایک روز قبل کے موقع پر کیے گئے بم دھماکوں کے ماسٹر مائینڈ اور داعش کے جنگجو کو جمعہ کے روز ہلاک کر دیا ہے۔ پاکستان میں عام انتخابات کے روز آٹھ فروری کو تمام تر سیکیورٹی انتظام،ات کے باوجود مجموعی طور پر دہشت گردی کے 56 واقعات ہوئے تھے۔

ان دہشت گردوں کو تعاقب کرتے ہوئے پاک فوج نے کارروائیوں کو سلسلہ جاری رکھا اور جمعہ کے روز ان بم دھماکوں میں ملوث اور ماسٹر مائینڈ داعشی جنگجو کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔

پاک فوج کے اطلاعات کے شعبہ' آئی ایس پی آر' کے مطابق جنگجو کو انٹیلی جنس کی بنیاد پر صوبہ بلوچستان کے ضلع قلعہ سیف اللہ کے علاقے میں ایک کارروائی کے دوارن ہلاک کیا گیا ہے۔ انٹیلی جنس رپورٹس میں بتایا گیا تھا کہ ضلع قلعہ سیف اللہ میں ایک ہائی ویلیو ٹارگیٹ موجود ہے۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں کا کہنا ہے کہ سات فروری کو قلعہ سیف اللہ اور پشین میں ہونے والے بم دھماکوں میں ملوث تھا اور سیکیورٹی فورسز کو انتہائی مطلوب تھا۔ واضح رہے مذکورہ بم دھماکوں کے دوران 24 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔ بم دھماکے کی ذمہ داری داعش نے قبول کر لی تھی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ہلاک ہونے والے دہشت گرد صوبہ بلوچستان میں خود کش دھماکوں کی منصوبہ بندی میں مصروف تھے۔ پاکستان کے صوبہ بلوچستان اور صوبہ خیبر پختونخوا میں آٹھ فروری کو عام انتخابات سے پہلے دہشت گردی کے متعدد واقعات ہوئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں