26 فروری سے پہلے دستاویزات بینکوں میں جمع کرائیں:2024 کے عازمینِ حج کو یاد دہانی

حکومتی اسکیم کے تحت 63 ہزار سے زائد پاکستانی عازمین سالانہ اسلامی حج ادا کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کی وزارتِ مذہبی امور نے اس ہفتے ملک کے 2024 کے عازمینِ حج کو یاد دلایا ہے کہ وہ اپنی سفری دستاویزات اور تصدیقی ای میلز 26 فروری سے پہلے متعلقہ بینکوں میں جمع کروا دیں۔

پاکستان نے گذشتہ دسمبر میں حج 2024 کے لیے قرعہ اندازی کے نتائج کا اعلان کیا جس میں سرکاری سکیم کے تحت 63,000 سے زائد درخواست دہندگان کو حج کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔ باقی ماندہ افراد پرائیویٹ ٹور آپریٹرز کے ذریعے یاترا کے لیے درخواست دیں گے۔

وزارتِ مذہبی امور نے ہفتے کے روز سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر لکھا، "عازمینِ حج ویزہ بائیو ایپ کے ذریعے گھر بیٹھے اپنے بائیو میٹرکس مکمل کر سکتے ہیں۔ اور پاسپورٹ کے ساتھ تصدیقی ای میلز 26 فروری سے پہلے متعلقہ بینکوں میں جمع کروائیں۔"

حج ایک سالانہ اسلامی فریضہ ہے جو اسلام کے پانچ ستونوں میں سے ایک ہے۔ ہر بالغ مسلمان پر لازم ہے کہ وہ اپنی زندگی میں کم از کم ایک بار مکہ مکرمہ کے مقدس مقامات کا سفر کرے اگر وہ مالی اور جسمانی طور پر قابل ہو۔

سعودی عرب نے پاکستان کا 179,210 عازمینِ حج کا قبل از وبائی مرض حج کوٹہ بحال کر دیا ہے اور سالانہ اسلامی حج ادا کرنے کے لیے عمر کی 65 سال کی بالائی حد ختم کر دی ہے۔ 2023 میں 81,000 سے زائد پاکستانی عازمین نے سرکاری سکیم کے تحت حج کیا جبکہ باقی نے پرائیویٹ ٹور آپریٹرز کا استعمال کیا۔

پاکستانی وزیرِ مذہبی امور انیق احمد نے یکم فروری کو اسلام آباد میں سعودی عرب کے سفیر نواف بن سعید المالکی سے ملاقات کی تاکہ حج کے انتظامات کو حتمی شکل دینے پر تبادلۂ خیال کیا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں