انتخابات میں شکست؛ سراج الحق مستعفی، جہانگیر ترین سیاست سے کنارہ کش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے عام انتخابات میں ناکامی پر جماعت اسلامی کی امارت سے استعفیٰ دے دیا۔

ایک بیان میں سراج الحق کا کہنا تھا کہ کوشش اور محنت کے باوجود انتخابات میں مطلوبہ کامیابی نہیں دلا سکا، انتخابات میں ناکامی کو قبول کرتے ہوئے بطور امیر جماعت اسلامی استعفٰی دیتا ہوں۔

ترجمان جماعت اسلامی کا کہنا ہے کہ سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی امیر العظیم نے شوریٰ کا اجلاس 17 فروری کو منصورہ میں طلب کر لیا ہے۔

ترجمان کے مطابق شوریٰ اجلاس میں سراج الحق کے استعفےکے بعدکی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا۔

واضح رہے کہ جماعتِ اسلامی انتخابات میں قومی اسمبلی کی کوئی بھی نشست حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی تھی۔

ادھر استحکام پاکستان پارٹی (آئی پی پی) کے چیئرمین جہانگیر ترین نے پارٹی عہدہ کے ساتھ ساتھ سیاست چھوڑنے کا اعلان کر دیا ہے۔

پیر کو 'ایکس' پر جاری کیے گئے بیان میں جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ وہ انتخابات میں کامیاب ہونے والوں کو مبارک باد دیتے ہیں اور عوام کی مرضی کا احترام کرتے ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ وہ ذاتی حیثیت میں ملک کی خدمت کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور اُمید کرتے ہیں کہ آئندہ آنے والے برس پاکستان کے لیے اچھے ثابت ہوں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں