سعودی سفیر اور نگران وزیر داخلہ کا فیصل مسجد میں تزئین و آرائش کے کام کا جائزہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

نگران وفاقی وزیر داخلہ وتجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز نے کہا ہے کہ 40 سال قبل سعودی عرب کی حکومت نے پاکستانیوں کو شاہ فیصل مسجد کا تحفہ دیا، اب اس مسجد کو مزید خوبصورت بنانے کے لئےاس کی تزئین و آرائش ہو رہی ہے۔

وہ پیر کو پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نواف سعید المالکی کے ہمراہ شاہ فیصل مسجد کے دورہ کے موقع پر اظہار خیال کر رہے تھے ۔

وفاقی سیکرٹری داخلہ آفتاب اکبر درانی، ضلعی انتظامیہ اور سی ڈی اے حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وزیر داخلہ نے سعودی سفیر کے ہمراہ نماز ظہر ادا کی جس کے بعد انہوں نے شاہ فیصل مسجد کے مرکزی ہال اور وسیع و عریض صحن میں مختلف مقامات کا معائنہ کیا۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے نگران وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ جب میں نے وزارت داخلہ کا منصب سنبھالا تو پہلا جمعہ شاہ فیصل مسجد میں ادا کیا۔

سعودی سفیر کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ذاتی دلچسپی لیتے ہوئے شاہ فیصل مسجد کی تزئین و آرائش شروع کرائی۔ انہوں نے کہا کہ شاہ فیصل مسجد کا شمار پاکستان کی خوبصورت ترین مساجد میں ہوتا ہے۔

سعودی سفیر نواف سعید المالکی نے کہا کہ سعودی حکومت کی جانب سے شاہ فیصل مسجد پاکستانیوں کے لئے ایک تحفہ تھا۔ اب اس مسجد کی تزئین و آرائش شروع کردی گئی ہے۔ وزارت داخلہ سمیت دیگر سٹیک ہولڈرز نے شاہ فیصل مسجد کی تزئین و آرائش میں تعاون کیا، یہ کام جلد مکمل ہو جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں