بھارتی بحری جہاز ہماری بحری مشقوں کی جاسوسی کرتے دیکھے گئے ہیں : پاکستان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاک بحریہ ان دنوں اپنی مشقوں میں مصروف ہے۔ یہ مشقیں ' سیز پارک2024 ' کے نام سے کریک کے علاقوں میں صوبہ سندھ اور صوبہ بلوچستان کے ساتھ سمندر میں جاری ہیں۔ پاکستان آرمی کے ترجمان ادارے ' آئی ایس پی آر ' نے ایک بیان میں جمعرات کے روز کہا ہے ' پاک بحریہ نے پڑوسی ملک بھارت کی طرف سے ایک جہاز کو جاری مشقوں کی جاسوسی کرنے کی کوشش کرتے دیکھا ہے۔'

آئی ایس پی آر کی طرف سے یہ بیان ایڈمرل پاک بحریہ نوید اشرف کے مشقین دیکھنے کے بعد سامنے آیا ہے۔ اس سے پہلے ایڈمرل نوید اشرف نے ' سیز پارک' مشقوں کا معائنہ کیا اور مشقوں میں مصروف اہلکاروں سے ملاقات کی۔ پاک بحریہ کی مشقیں ہر دو سال بعد منعقد کی جاتی ہیں تاکہ امن اور جنگ دونوں کے لیے اپنی تیاری مکمل رکھی جائےاور فورس کو متحرک رکھا جائے۔

آئی ایس پی آر کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے' مشقوں کے دوران سمندر میں پی این وارشپس اور جنگی طیاروں کے علاوہ بھارتی بحریہ کی سب میرینز بھی دیکھی گئیں جو پاک بحریہ کی مشقوں کی جاسوسی میں مصروف تھے۔ صورت حال کے پیش نظر پاک بحریہ نے تمام ضروری اقدامات کیے ۔

واضح رہے پاکستان اور بھارت دونوں پڑوسی جوہری ملک ہیں اور باہم تین جنگیں بھی لڑ چکے ہیں۔ دونوں کا مسئلہ کشمیر کے علاوہ سرکریک کے ایشو پر بھی باہمی تنازعہ موجود ہے۔ بھارتی بحریہ کے حاضر سروس افسر کلبھوشن یادیو پاکستان میں جاسوسی اور پاکستان میں دہشت گردی کے جرم میں گرفتار ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں