مجھے دو سال کے لیے وزیر اعظم بنانے کی پیشکش کی گئی: بلاول بھٹو زرداری

میں نے منع کر دیا، اس طریقے سے وزیر اعظم نہیں بنوں گا؛ ٹھٹھہ میں جلسے سے خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ انتخابات کے نتیجے میں آئندہ جو بھی حکومت بنے لیکن وہ عوامی نمائندے کی حیثیت سے ہی قومی اسمبلی میں بیٹھیں گے۔

بلاول بھٹو زرداری نے پاور شیئرنگ فارمولا مسترد کرتے ہوئے دعوی کیا ہے کہ مجھے کہا گیا کہ پہلے تین سال پہلے ہمیں اور پھر دو سال آپ وزیراعظم بنیں، میں نے منع کر دیا، اس طریقے سے وزیراعظم نہیں بنوں گا۔

اتوار کو صوبہ سندھ کے علاقے ٹھٹھہ میں جلسے سے خطاب میں بلاول بھٹو نے نے کہا کہ الیکشن اس لیے نہیں لڑرہا تھا کہ اسلام آباد کی کرسی پر بیٹھنا ہے، میرے پاس ایسے بھی فارم 45 ہیں جس کے مطابق پیپلز پارٹی کا امیدوار جیت چکا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ لیکن ن لیگ اور ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار کے جیت کا اعلان کیا گیا، میں اس لیے الیکشن لڑ رہا تھا پاکستان کے عوام مشکلات میں ہیں، عوام نے ثابت کردیا چاروں صوبوں کی زنجیر پیپلز پارٹی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ملک میں سیاسی اور معاشی بحران ہے معاشرے کو تقسیم کیا گیا ہے، پیپلز پارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ میں لگی آگ کو بجھانا ہے، پاکستان کو بچانے کا وقت آ گیا۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ آصف علی زرداری سینیٹ الیکشن کے بعد صدر کے امیدوار ہوں گے، آئیں ہمارے ساتھ بات چیت کرکے شکایات کو دور کریں، وفاق اور جمہوریت کو خطرہ ہوا تو کارکنوں کو نکلنے کی کال دوں گا۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیدوار کی بلاول بھٹو پر لاڑکانہ میں دھاندلی کروانے کے الزامات کا ذکر کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی نے بتایا کہ اپنے آپ کو مولانا کہہ کے ڈھٹائی سے جھوٹ بولنا مذاق ہے۔

انہوں نے کہا کہ میری چھوڑی ہوئی نشست پر ضمنی الیکشن ہوں گے، ایک سیٹ چھوڑ رہا ہوں مولانا اور پیر صاحب وہاں مقابلہ کریں، ایک طرف خود کو مولانا کہتے ہیں اور پھر ڈھٹائی سے جھوٹ بولتے ہیں۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ پیر صاحب اتنے سارے مریدوں کو دیکھ کر سمجھتے ہیں الیکشن جیت جائیں گے، پیپلز پارٹی نے ایک مرتبہ پھر پاکستان کھپے کا نعرہ لگایا ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ملک میں آمرانہ نظام لانے کی کوششوں کی مزاحمت کریں گے، سندھ اور بلوچستان کے سیلاب متاثرین لاوارث ہیں انکی مدد کرنی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں