ممتاز سعودی گروپ کی سرمایہ کاری کےادارے سے بات چیت،پاکستان میں کاروبارکی توسیع پرغور

سعودی اتحاد کے مفادات مختلف شعبوں بشمول رئیل اسٹیٹ، فیشن، ریٹیل اور سرمایہ کاری پر محیط ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متنوع کاروباری مفادات کے حامل ایک ممتاز سعودی گروپ کے وفد نے بدھ کو پاکستان کے دورے کے دوران خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل (ایس آئی ایف سی) کے عہدیداروں سے ملاقات کی اور ملک میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار کیا۔

پاکستان کے اہم اقتصادی شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کے لیے گذشتہ سال ایک ہائبرڈ حکومتی ادارہ ایس آئی ایف سی قائم کیا گیا جس نے وعدہ کیا ہے کہ وہ ملک میں کاروباری ماحول پیدا کرے گا اور سرمایہ کاروں کو ایک ہی جگہ پر حل پیش کرے گا۔

اپنے قیام کے بعد سے یہ توانائی، کانوں اور معدنیات، انفارمیشن ٹیکنالوجی، زراعت اور مویشی، اور صنعت و سیاحت جیسے شعبوں میں سرمایہ کاری کی کوشش کر رہا ہے۔

کونسل نے خاص طور پر خلیجی ممالک پر توجہ دی ہے جہاں اس کے اقتصادی مفادات گہرے طور پر منسلک ہیں۔

ایک سرکاری بیان میں کہا گیا، "سعودی عرب کے العجلان ہولڈنگ گروپ کے ایک اعلیٰ سطحی وفد نے 6 مارچ کو خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل کا دورہ کیا۔"

اس میں مزید کہا گیا، "وفد نے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کرنے میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔"

العجلان ہولڈنگ گروپ نے بیرون ملک بھی سرمایہ کاری کی ہے جو اس کے سرمایہ کاری کے پورٹ فولیو کو متنوع بنانے اور دنیا بھر کی اہم مارکیٹوں میں عالمی موجودگی قائم کرنے کی حکمتِ عملی کے مطابق ہے۔

پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاری کے لیے سرگرمِ عمل ہے جو اقتصادی ترقی کو تیز کرنے، روزگار کے مواقع پیدا کرنے اور اپنی تکنیکی اور صنعتی صلاحیتوں کو بڑھانے کے لیے اس کی حکمتِ عملی کا حصہ ہے۔

غیر ملکی سرمایہ کاری کو ایسے وقت میں سرمایہ لانے کے لیے انتہائی اہم سمجھا جاتا ہے جب ملک بین الاقوامی قرض دہندہ ایجنسیوں سے مالیاتی بیل آؤٹ پیکج کی تلاش میں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں