سعودی عرب کا پاکستان میں اعلیٰ ترین کھجوروں کی تقسیم کا پروگرام شروع

پروگرام کے مطابق سعودی عرب پاکستان میں دس ٹن اعلیٰ ترین کھجوریں تقسیم کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سرکاری ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس آف پاکستان (اے پی پی) نے رپورٹ کیا کہ سعودی عرب کی وزارت برائے اسلامی امور و دعوت و رہنمائی نے اس ہفتے پاکستان میں دس ٹن اعلیٰ ترین کھجوریں تقسیم کرنے کے لیے ایک پروگرام شروع کیا۔

اے پی پی نے بتایا کہ خادم الحرمین الشریفین عطیہ پروگرام کا آغاز وزارت نے ہفتہ کو پاکستان میں سعودی سفارت خانے میں کیا۔ پاکستان میں مملکت کے سفیر نواف بن سعید المالکی نے اسلام آباد میں افتتاحی تقریب میں شرکت کی۔

المالکی نے کہا کہ یہ اقدام مملکت کے پروگرام کا حصہ ہے جو رمضان کے مقدس مہینے میں پاکستان سمیت کئی ممالک میں منعقد کیا گیا ہے۔

ہفتہ کو اے پی پی نے مالکی کے حوالے سے بتایا، "یہ پروگرام 10 ٹن بہترین کھجوریں تقسیم کرتا ہے جس کی رقم 30,000 انفرادی تحائف کے برابر بنتی ہے۔"

"یہ تحائف سعودی عرب کے عوام، اس کی حکومت، اس کی دانشمندانہ قیادت اور پاکستانی عوام کے درمیان اخوت اور خیر سگالی کے رشتے کی علامت ہیں۔"

روزہ دینِ اسلام کے پانچ ستونوں میں سے ایک ہے جس میں مسلمان ایک ماہ تک طلوعِ آفتاب سے غروبِ آفتاب تک خورونوش سے پرہیز کرتے ہیں۔ پاکستان سمیت دنیا کے کئی حصوں میں مسلمان روایتی طور پر کھجور سے روزہ افطار کرتے ہیں۔

اس ماہ کے شروع میں رمضان کے آغاز سے پہلے سعودی عرب نے پاکستان کو 100 ٹن کھجور تحفے میں دی تھی۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان مضبوط تجارتی، دفاعی اور برادرانہ تعلقات ہیں۔ مملکت میں 2.7 ملین سے زیادہ پاکستانی تارکینِ وطن کام کر رہے ہیں جو نقدی کی کمی کا شکار جنوبی ایشیائی ملک کے لیے سب سے زیادہ ترسیلاتِ زر بھیجنے والا ملک ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں