ہرنائی میں کوئلے کی کان میں دھماکا، جاں بحق 12 افراد کی لاشیں نکال لی گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بلوچستان کے ضلع ہرنائی میں کوئلے کی کان میں گیس دھماکے کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے 12 افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں۔

چیف انسپکٹر مائنز نے بتایا کہ حادثے کے مقام پر ریسکیو آپریشن مکمل ہو گیا ہے، کوئلے کی کان سے آٹھ کانکنوں کو بھی بحفاظت نکال لیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ گیس دھماکے کے وقت کان میں 20 کانکن موجود تھے، حادثے میں جاں بحق ہونے والے کانکنوں کا تعلق کوئٹہ سے متصل ضلع پشین سے ہے۔

چیف انسپکٹر نے مزید بتایا کہ جاں بحق کانکنوں کی لاشیں آبائی علاقے پشین روانہ کردی گئی ہیں، کان میں دھماکہ میتھین گیس کی وجہ سے ہوا ہے۔

وزیر اعظم کا اظہار افسوس

وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے ہرنائی میں کوئلے کی کان میں دھماکے کے نتیجے میں قیمتی جانوں کے نقصان پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیا ہے۔

بدھ کو وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم نے واقعہ میں جاں بحق ہونے والوں کی بلند درجات کی دعا اور لواحقین سے اظہار تعزیت کیا۔

وزیراعظم نے کان کنوں کی ریسکیو کی کوششوں کو تیز تر کرنے کی ہدایت کی، وزیراعظم نے حادثے کے نتیجے میں زخمی کان کنوں کو ہر ممکن طبی امداد فراہم کرنے کی بھی ہدایت کردی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ اس طرح کے واقعات انتہائی تکلیف دہ اور افسوسناک ہیں، غم کی اس گھڑی میں متاثرہ خاندانوں کے ساتھ کھڑے ہیں، حکومت زخمیوں اور متاثرہ خاندانوں کو ہر ممکن ریلیف فراہم کرے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں