خیبر پختونخوا میں بارشوں سے تباہی، مختلف حادثات میں 10 افراد جاں بحق

پی ڈی ایم اے نے بارش اور ژالہ باری کے باعث جانی و مالی نقصانات کی رپورٹ جاری کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خیبر پختونخوا میں بارشوں نے تباہی مچادی، چھتیں گرنے اور دیگر حادثات میں 10 افراد جاں بحق جبکہ 12 افراد زخمی ہوئے۔

پراونشل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (پی ڈی ایم اے) نے بارش اور ژالہ باری کے باعث صوبے میں جانی و مالی نقصانات کی رپورٹ جاری کردی۔

رپورٹ کے مطابق گذشتہ دو روز میں خیبر پختونخوا میں بارشوں نے تباہی مچا دی، چھتیں گرنے اور دیگر حادثات میں بچوں اور خواتین سمیت 10 افراد جاں بحق جبکہ 12 افراد زخمی ہوئے۔

پی ڈی ایم اے کے مطابق جاں بحق افراد میں آٹھ بچے اور دو خواتین بھی شامل ہیں، اسی طرح زخمیوں میں نو بچے، دو خواتین اور ایک مرد شامل ہے۔

رپورٹ کے مطابق شدید بارشوں سے دیواریں اور چھتیں گرنے سے 27 مکانات کو نقصان پہنچا جن میں تین گھروں کو مکمل جبکہ 24 مکانات کو جزوی نقصان پہنچا۔

پی ڈی ایم اے نے بتایا کہ بارش سے حادثات پشاور، نوشہرہ، باجوڑ، شانگلہ، مانسہرہ، بنوں، مہمند، مردان اور شمالی وزیرستان میں رونما ہوئے، متاثرہ اضلاع کے متاثرین میں امدادی سامان فراہم کر دیا گیا۔

محکمہ موسمیات نے خیبر پختونخوا میں موسم خشک رہنے کی پیشگوئی کرتے ہوئے بتایا کہ پشاور، نوشہرہ، مردان، چارسدہ سمیت میدانی اضلاع میں بارش کا امکان نہیں جبکہ ہزارہ اور مالاکنڈ ڈویژن سمیت بالائی اضلاع میں کہیں کہیں ہلکی بارش کی پیش گوئی کر دی۔

گذشتہ 24 گھنٹوں میں سب سے زیادہ بالاکوٹ میں 38 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، اسی طرح پشاور میں 24 اور ایبٹ آباد میں 34 ملی میٹر بارش ہوئی۔

محکمہ موسمیات کے مطابق جڑواں شہروں اور لاہور سمیت پنجاب میں صبح کے اوقات میں تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔

گذشتہ شب مری میں شدید بارش اور ژالہ باری سے بجلی کا نظام متاثر ہوا، آزاد کشمیر کی وادی نیلم میں رات سے موسلادھار بارش اور اپر نیلم، لوات بالا، شاردہ ،اڑانگ کیل اور شونٹھر سمیت دیگر سیاحتی مقامات پر برف پڑنے کا سلسلہ جاری ہے جبکہ لینڈ سلائیڈنگ سے شاہراہِ نیلم ٹریفک کیلئے کئی مقامات پر بند ہوگئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں