خفیہ اطلاع پر ڈیرہ اسماعیل خان میں فورسز کا آپریشن، آٹھ دہشت گرد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خیبر پختونخوا کے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں سکیورٹی فورسز کی جانب سے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کیے گئے آپریشن کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں آٹھ مشتبہ دہشت گرد ہلاک ہو گئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق سکیورٹی فورسز کی جانب سے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر ڈی آئی خان میں انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن کے دوران آٹھ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا۔

پانچ اپریل کو سکیورٹی فورسز نے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر ضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں انٹیلی جنس کی بنیاد پر آپریشن کیا۔ اس دوران شدید فائرنگ کے تبادلے میں آٹھ دہشت گردمارے گئے۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق مارے گئے دہشت گرد سکیورٹی فورسز کے خلاف دہشت گردی کی متعدد کارروائیوں اور معصوم شہریوں کی ٹارگٹ کلنگ میں سرگرم رہے۔ ہلاک دہشت گردوں سے اسلحہ، گولہ بارود اور دھماکا خیز مواد بھی برآمد ہوا۔

سکیورٹی فورسز کی جانب آپریشن کو علاقہ عوام نے سراہاہے جب کہ علاقے میں پائے جانے والے دیگر دہشت گردوں کو ختم کرنے کے لیے سینی ٹائزیشن آپریشن کیا جا رہا ہے۔ سکیورٹی فورسز ملک سے دہشت گردی کی لعنت کو ختم کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔

وزیر اعظم کا مذمتی بیان

دوسری جانب وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے ایک بیان میں ڈیرہ اسماعیل خان میں دہشت گردوں کے خلاف کامیاب آپریشن پر سکیورٹی فورسز کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ سکیورٹی فورسز کے بہادر جوانوں نے اپنی جان ہتھیلی پر رکھتے ہوئے دہشت گردوں کا بہادری سے مقابلہ کیا اور انہیں جہنم واصل کیا۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہماری سکیورٹی نے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ ہم دہشت گردی کے عفریت کو کچلنے کے لئے پر عزم ہیں۔ پوری قوم سکیورٹی فورسز کے شہیدوں اور غازیوں کو سلام پیش کرتی ہے۔
*

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں