سعودی ولی عہد، بحرینی ولی عہد اور شہباز شریف نے مکہ میں نماز ادا کی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی ولی عہد اور وزیر اعظم شہزادہ محمد بن سلمان، پاکستان کے وزیر اعظم محمد شہباز شریف اور بحرین کے ولی عہد شہزادہ سلمان بن حمد آل خلیفہ نے 29 ویں شب کو مکہ مکرمہ میں نماز ادا کی۔

قبل ازیں ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے اتوار کو مکہ مکرمہ کے الصفا پیلس میں پاکستان کے وزیر اعظم محمد شہباز شریف کا خیر مقدم کیا۔

مملکت کے سرکاری خبر رساں ادارے ’ایس پی اے‘ کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف نے بحرین کے ولی عہد شہزادہ سلمان بن حمد آل خلیفہ کی موجودگی میں سعودی ولی عہد کے ساتھ افطار بھی کیا۔

بعد ازاں باضابطہ ملاقات میں ولی عہد اور شہباز شریف نے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان تاریخی تعلقات، دوطرفہ تعاون کے پہلووں اور مختلف شعبوں میں انہیں ترقی دینے کے طریقوں کا جائزہ لیا۔

علاوہ ازیں علاقائی اور بین الاقوامی صورتحال میں ہونے والی پیش رفت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

عمرہ ادائی

قبل ازیں پاکستان کے وزیراعظم شہباز شریف اور ان کے وفد کے ارکان نے اتوار کی شب عمرہ ادا کیا۔ انہوں نے امت مسلمہ اور قوم کی ترقی وخوش حالی کے لیے دعائیں کیں۔

خیال رہے وزیراعظم شہباز شریف سنیچر کو سعودی عرب پہنچے تھے۔

مدینہ منورہ پہنچے کے بعد انہوں نے مسجد نبوی میں نوافل ادا کیے اور روضہ رسول پر حاضری دی تھی۔ شہباز شریف اتوار کو عمرہ کی ادائیگی کے لیے مدینہ منورہ سے مکہ مکرمہ پہنچے تھے۔

مکہ مکرمہ کے ریلوے اسٹیشن پر پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نواف بن سعید المالکی نے وزیراعظم کا استقبال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں