سعودی وفد کا مکہ روٹ اقدام کے لیے کراچی ایئرپورٹ پر سہولیات کا معائنہ

امکان ہے کہ اس سال اس اقدام سے 60 فیصد سے زائد پاکستانی عازمین سرکاری پروگرام کے تحت مستفید ہوں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی (پی سی اے اے) نے بتایا کہ سعودی عرب کے دو رکنی وفد نے اتوار کو کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ کا دورہ کیا تاکہ مکہ روٹ اقدام کے لیے وہاں کی سہولیات کا معائنہ کیا جائے جس کا مقصد مقامی عازمین حج کو سہولت فراہم کرنا ہے۔

2019 میں شروع کردہ یہ اقدام امیگریشن کے طریقۂ کار کو حجاج کے روانگی کے ملک میں ہی مکمل کرنے کی اجازت دیتا ہے۔ اس سے سعودی عرب پہنچنے پر طویل طریقہ کار اور کسٹم چیکس کو نظرانداز کرنا ممکن ہو جاتا ہے جس سے انتظار کے وقت میں نمایاں کمی آ جاتی ہے اور داخلے کا عمل ہموار اور تیز تر ہو جاتا ہے۔

سرکاری سکیم کے تحت حج کرنے والے پاکستانی عازمین گذشتہ دو سالوں سے اسلام آباد کے ہوائی اڈے پر اس سہولت سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ لیکن حکومت اس اقدام کو دوسرے شہروں تک بھی توسیع دینا چاہتی ہے۔

دو رکنی وفد جس میں سعودی قونصل خانے کے حکام بھی شامل تھے، ان کا کراچی ایئرپورٹ پہنچنے پر پی سی اے اے حکام نے پرتپاک استقبال کیا۔

پی سی اے اے نے ایک بیان میں کہا، "ان کے دورے کا مقصد ہوائی اڈے کی سہولیات کا معائنہ کرنا اور روٹ ٹو مکہ منصوبے کے انتظامات پر تبادلۂ خیال کرنا تھا۔ اے پی ایم (ایئرپورٹ مینیجر) نے وفد کو دورے کے دوران ہوائی اڈے کی سہولیات کا ایک جامع دورہ کروایا۔"

پی سی اے اے کے مطابق وفد نے عازمینِ حج کے داخلے کے عمل اور امیگریشن کی جگہ مختص کرنے میں خصوصی دلچسپی ظاہر کی۔ دیگر اہم زیرِ بحث نکات امیگریشن ہال مختص کرنے اور سرکاری اور پرائیویٹ سکیم کے حجاج کے درمیان فرق سے متعلق تھے۔

پاکستان کی وزارتِ مذہبی امور نے گذشتہ ماہ حج سیزن سے قبل کراچی ایئرپورٹ پر مکہ روٹ اقدام کے لیے سروے مکمل کرنے کا اعلان کیا تھا۔

جنوبی ایشیائی ملک کو توقع ہے کہ اس سال حج کرنے والے 60 فیصد سے زائد عازمین اس اقدام سے مستفید ہوں گے۔ پرائیویٹ حج سکیم کا انتخاب کرنے والے افراد بھی اس سہولت سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں کیونکہ انہیں خدمات فراہم کرنے والے ٹور آپریٹرز نے اس مقصد کے لیے پاکستانی وزارتِ مذہبی امور سے رابطہ کیا ہے۔

سعودی عرب نے گذشتہ سال پاکستان کا 179,210 عازمینِ حج کا قبل از کووڈ-19 حج کوٹہ بحال کر دیا تھا اور عمر کی بالائی حد 65 سال ختم کردی تھی۔ 2023 میں 81,000 سے زائد پاکستانی عازمین نے سرکاری سکیم کے تحت حج کیا جبکہ باقی افراد نے نجی ٹور آپریٹرز کا استعمال کیا۔

اس سال حج 14 جون سے 19 جون تک جاری رہنے کی امید ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں