پاکستان سے طریق مکہ پروگرام کی کراچی تک توسیع، 9 مئی سے حج پروازوں کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جمعہ کو جاری ہونے والے ایک سرکاری بیان کے مطابق پاکستان میں عازمینِ حج کے لیے ایک بڑی پیش رفت ہوئی ہے اور حکومت کا ارادہ ہے کہ جنوبی بندرگاہی شہر کراچی تک توسیع شدہ طریق مکہ پروگرام کے تحت نو مئی سے سعودی عرب کے لیے فلائٹ آپریشن شروع کیا جائے۔

سعودی حکام کی جانب سے متعدد مسلم اکثریتی ریاستوں کے ساتھ مل کر شروع کیا گیا یہ اقدام مکہ مکرمہ جانے والے متعدد افراد کے لیے سالانہ حج کی سہولت فراہم کرتا ہے۔

اس اقدام کے تحت امیگریشن پروسیسنگ جیسے کام حجاج کے آبائی ملک میں مکمل کر لیے جاتے ہیں جس سے وہ سعودی عرب پہنچنے پر اس عمل سے بچ سکتے ہیں۔ اس سے نہ صرف سعودی ہوائی اڈوں پر انتظار کے اوقات اور ہجوم کم ہو جاتا ہے بلکہ یہ حجاجِ کرام کے سفر کو زیادہ آرام دہ بنا کر اور روحانیت پر مرکوز کرکے ان کے مجموعی تجربے کو بھی بہتر بناتا ہے۔

پاکستان نے 2019 میں اسلام آباد سے شروع ہونے والے پائلٹ پروگرام کے طور پر اس اقدام میں شمولیت اختیار کی تھی۔ کامیابی ملنے پر اس پروگرام کو دوسرے شہروں تک توسیع دی گئی اور کراچی کے زائرین اس سال پہلی بار اس سے مستفید ہونے کی تیاری کر رہے ہیں۔

پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا، "طریق مکہ منصوبے کے تحت حج پروازیں نو مئی سے شروع ہو کر آٹھ جون کو اختتام پذیر ہوں گی۔" اور اس میں مزید کہا گیا کہ کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر تمام متعلقہ اداروں نے منصوبے پر کامیاب عمل درآمد کے لیے غیر متزلزل عزم کی یقین دہانی کروائی ہے۔

کراچی ایئرپورٹ پر ہونے والی ایک میٹنگ کے بعد ایک سرکاری بیان جاری کیا گیا جس میں اس اقدام پر توجہ مرکوز کی گئی۔

تمام متعلقین بشمول ایئرلائن کے نمائندگان، گراؤنڈ ہینڈلنگ ایجنسیاں، بارڈر ہیلتھ سروسز، ایئرپورٹ سکیورٹی، وفاقی تحقیقاتی ایجنسی، کسٹمز اور انسدادِ منشیات فورس بحث کے دوران موجود تھے۔

اجلاس میں حجاجِ کرام کے ہوائی اڈے پر قیام کے مختلف مراحل کے طریقۂ کار پر توجہ مرکوز کی گئی۔ ان میں سعودی امیگریشن کی رسمی کارروائیوں کے بعد موقع پر ان کی آمد سے لے کر روانگی تک کے مراحل شامل ہیں۔

اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ سعودی عملے کو بین الاقوامی روانگی کے سیٹلائٹ ایریا میں آٹھ کاؤنٹرز اور تمام مطلوبہ آلات تک رسائی حاصل ہوگی۔

ہوائی اڈے کے مینیجر نے حجاج کو بلاتعطل سفر کی سہولت فراہم کرنے کی اہمیت پر زور دیا اور تمام ایجنسیوں سے تقاضہ کیا کہ معزز مہمانوں کی طرح حجاجِ کرام کا استقبال اور سلوک کریں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں