دبئی مقیم کوہ پیما نائلہ کیانی لڑکیوں کی تعلیم کے لیے پاکستان کی خیر سگالی سفیر مقرر

دنیا کی 14 بلند ترین چوٹیوں میں سے 11 کو سر کرنے والی کوہ پیما تعلیمِ نسواں کے لیے شعور پیدا کریں گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سرکاری خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس آف پاکستان (اے پی پی) نے بدھ کو بتایا کہ پاکستان کی وزارتِ تعلیم نے ممتاز کوہ پیما نائلہ کیانی کو ملک میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے اپنی خیر سگالی سفیر مقرر کیا ہے۔

دبئی میں مقیم کیانی دنیا کی 14 بلند ترین چوٹیوں میں سے 11 کو سر کرنے والی اولین پاکستانی خاتون اور ملک کی تیسری کوہ پیما ہیں۔ وہ نانگا پربت، گاشربرم ون (جی-ون)، گاشربرم ٹو (جی-ٹو)، لہوتسے، مناسلو، براڈ چوٹی، اناپورنا، مکالو اور چو اویو پہاڑی چوٹیوں کو سر کرنے والی اولین پاکستانی خاتون بھی ہیں۔

پاکستان کی حکومت نے کیانی کو ان کی نمایاں کامیابیوں پر اس سال کے آغاز میں ملک کے اعلیٰ ترین سول اعزاز ستارۂ امتیاز سے نوازا۔ اس لحاظ سے کیانی واحد پاکستانی خاتون ہیں جنہیں اب تک یہ ایوارڈ ملا ہے۔

اے پی پی نے کیانی کے حوالہ سے بتایا، "مجھے لڑکیوں کی تعلیم کے لئے قومی خیر سگالی سفیر مقرر ہونے پر فخر ہے۔"

انہوں نے مزید کہا، "ہمارے ملک میں خواتین کے بااختیار اور کامیاب ہونے کا واحد راستہ تعلیم ہے۔ میں اپنے پلیٹ فارم کو ایسے تعلیمی اقدامات کی حمایت اور وکالت کی غرض سے استعمال کرنے کے لیے پرعزم ہوں جو اس بات کو یقینی بنائیں کہ پاکستان میں ہر لڑکی کو معیاری تعلیم تک رسائی حاصل ہو۔"

اے پی پی نے کہا، بطورِ سفیر کیانی لڑکیوں کی تعلیم کی اہمیت کے بارے میں شعور اجاگر کرنے کے لیے کام کریں گی۔ اے پی پی کے بیان میں کہا گیا، لڑکیوں کے لیے تعلیمی مواقع کو بہتر بنانے کی غرض سے وفاقی اور صوبائی حکومتیں جو اقدامات کریں گی، کیانی ان کی حمایت اور فروغ کے لیے بھی کام کریں گی۔

اس ماہ کے شروع میں نائلہ کیانی نیپال میں ماؤنٹ مکالو سر کرنے والی اولین پاکستانی خاتون بن گئیں۔ یہ عظیم پہاڑ دنیا کا پانچواں بلند ترین پہاڑ ہے۔ یہ 8,485 میٹر (27,838 فٹ) بلند ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں