پاکستان کی اولین مسیحی خاتون بریگیڈیئر کو وزیرِ اعظم کی مبارک باد

آرمی میڈیکل کور کی ہیلن میری رابرٹس 76 سالوں میں اس عہدے تک پہنچنے والی اولین مسیحی خاتون افسر ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیرِ اعظم شہباز شریف نے ہفتہ کو بریگیڈیئر ہیلن میری رابرٹس کو مبارکباد پیش کی جو پاکستان کی 76 سالہ تاریخ میں فوج کے اعلیٰ عہدے پر فائز ہونے والی اولین مسیحی خاتون افسر بن گئی ہیں۔

عرب نیوز کے سوال کے جواب میں فوج کے میڈیا ونگ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) نے تصدیق کی کہ آرمی میڈیکل کور کی بریگیڈیئر رابرٹس کو ان کے نئے عہدے پر ترقی دے دی گئی تھی۔

خواتین کئی عشروں سے پاکستانی فوج کے میڈیکل کور کا لازمی حصہ ہیں اور حال ہی میں انہوں نے سپاہیوں کے طور پر جنگی ڈویژنز میں شامل ہونا شروع کیا ہے۔ اقلیتی مذہبی برادریوں کے کئی دیگر ارکان بھی مختلف درجات پر پاکستانی فوج سے وابستہ ہیں۔

وزیرِ اعظم کے دفتر سے جاری بیان میں انہوں نے کہا، "بریگیڈیئر ہیلن میری رابرٹس نے اپنی محنت سے ثابت کیا ہے کہ پاکستانی خواتین کسی بھی شعبے میں مردوں سے کم نہیں ہیں۔"

انہوں نے مزید کہا، "پاکستانی مسیحی برادری سمیت پوری قوم کو بریگیڈیئر ہیلن میری رابرٹس اور اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والی دیگر ہزاروں محنتی خواتین پر فخر ہے۔"

شہباز شریف نے کہا، بریگیڈیئر رابرٹس اپنی سرشاری، عزم اور انسانیت کے لیے جذبہ کی بنا پر خواتین کی نئی نسل کے لیے ایک وجۂ تحریک ہوں گی۔

مسلم اکثریتی پاکستان نے حالیہ برسوں میں اقلیتی برادریوں کے لیے جاری معاشرتی چیلنجز کے درمیان مذہبی شمولیت کے لیے کوشش کی ہے۔

گذشتہ سال فوج کے سربراہ جنرل عاصم منیر نے راولپنڈی کے کرائسٹ چرچ میں کرسمس کی تقریب کے دوران ملک کی ترقی میں مسیحی برادری کے کردار کو سراہا تھا۔

انہوں نے معیاری تعلیم، صحت کی نگہداشت اور انسان دوستی کو فروغ دینے کے ساتھ ساتھ قومی دفاع میں ان کی قابلِ ذکر شراکت کی تعریف کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں