پاکستان کے نائب وزیرِ اعظم اسحٰق ڈار کی 10 سے 11 جون تک اردن میں غزہ کانفرنس میں شرکت

مسلم رہنماؤں کا مقصد "سنگین انسانی صورتِ حال" پر اجتماعی ردِعمل کی نشاندہی کرنا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دفترِ خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان کے نائب وزیرِ اعظم اسحٰق ڈار غزہ میں جاری جنگ سے متعلق کانفرنس میں شرکت کے لیے 10 سے 11 جون تک اردن جائیں گے۔

غزہ کی پٹی پر اسرائیل کی جنگ میں فلسطینی وزارتِ صحت کے مطابق، 37,000 سے زیادہ افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

ایک مجوزہ اسرائیل-حماس جنگ بندی معاہدہ اس وقت غیر یقینی کا شکار ہے جب امریکی وزیرِ خارجہ انٹونی بلنکن آج پیر کو خطے میں اپنے آٹھویں سفارتی مشن پر شرقِ اوسط پہنچ رہے ہیں۔ وہ اسرائیل، اردن اور قطر کے سفر سے قبل قاہرہ میں مصری صدر عبدالفتاح السیسی سے ملاقات کریں گے۔

وزارتِ خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ نائب وزیرِ اعظم اور وزیرِ خارجہ محمد اسحٰق ڈار 10-11 جون کو اردن کا دو روزہ دورہ کریں گے جہاں وہ اعلیٰ سطحی کانفرنس 'کال فار ایکشن: ارجنٹ ہیومینٹیرین ریسپانس فار غزہ' میں شریک ہوں گے۔

اس کانفرنس کا اہتمام اردن کے شاہ عبداللہ دوم، مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی اور اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے مشترکہ طور پر کیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس کانفرنس کا مقصد "غزہ کی سنگین انسانی صورتِ حال پر اجتماعی ردِعمل" کی نشاندہی کرنا اور اسے تیار کرنا ہے۔ اور مزید کہا گیا کہ پاکستان کی شرکت شرقِ اوسط میں امن و استحکام کے لیے اس کی مسلسل وابستگی اور فلسطینی مقصد کے لیے اس کی دیرینہ حمایت کو واضح کرتی ہے۔

وزارتِ خارجہ نے مزید کہا، "اس موقع پر نائب وزیرِ اعظم کے شریک ممالک کے ہم منصبوں کے ساتھ دو طرفہ ملاقاتیں کرنے کا امکان ہے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں