تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
شام کے سرحدی علاقے میں جھڑپ، تین ترک فوجی افسروں سمیت 23 ہلاک، 40 زخمی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 18 ربیع الثانی 1441هـ - 16 دسمبر 2019م
آخری اشاعت: اتوار 29 شعبان 1440هـ - 5 مئی 2019م KSA 05:39 - GMT 02:39
شام کے سرحدی علاقے میں جھڑپ، تین ترک فوجی افسروں سمیت 23 ہلاک، 40 زخمی
ترکی نے ادلب میں 10 مقامات پر انٹیلی جنس پوائنٹ بنا رکھے ہیں۔
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

شام کے سرحدی شہر عفرین میں ترک فوجیوں اور جنگجوئوں کے درمیان جھڑپ اور شامی فوج کی بمباری میں تین ترک فوجیوں سمیت 23 افراد ہلاک اور 40 زخمی ہو گئے۔

’’العربیہ‘‘ اور ’’الحدث‘‘ نیوز چینلز کے نامہ نگاروں کے مطابق عفرین کے مقام پر شامی فوج کی طرف سے توپ خانے سے گولہ باری کی گئی۔ ادھر کرد جنگجوئوں اور ترک فوج کے درمیان بھی گھمسان کی لڑائی کی اطلاعات ہیں۔

ترکی کے ایک سیکیورٹی اہلکار نے ہفتے کے روز بتایا کہ شمالی شام میں ادلب کے علاقے میں ان کے ایک انٹیلی جنس مرکز پر توپ خانے سے حملہ کیا گیا۔ ممکنہ طور پر یہ حملہ شامی فوج کی طرف سے کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انہیں‌ معلوم ہے کہ یہ حملہ شام کے اندر سے کیا گیا ہے تاہم فی الحال اس کا جواب نہیں دیا گیا۔ خیال رہے کہ ترکی نے ادلب میں 10 مقامات پر انٹیلی جنس پوائنٹ بنا رکھے ہیں۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند