تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
وزیراعظم عمران خان مکہ مکرمہ میں او آئی سی کے سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 22 ذوالحجہ 1440هـ - 24 اگست 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 18 رمضان 1440هـ - 23 مئی 2019م KSA 17:00 - GMT 14:00
وزیراعظم عمران خان مکہ مکرمہ میں او آئی سی کے سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے
وزیراعظم عمران خان کی سعودی عرب کے گذشتہ دورے کے موقع پر شاہ سلمان بن عبدالعزیز سے ملاقات کی تصویر۔ فائل
اسلام آباد۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان اسلامی تعاون تنظیم ( او آئی سی) کے چودھویں اسلامی سربراہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔سعودی عرب کی میزبانی میں یہ سربراہ اجلاس مکہ مکرمہ میں 31 مئی کو منعقد ہورہا ہے۔

اسلام آباد میں دفتر خارجہ نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی 27 اور 28 مئی کو سعودی عرب میں او آئی سی کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔اس میں سربراہ اجلاس کے ایجنڈے کو حتمی شکل دی جائے گی۔

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی سربراہی میں ہونے والے اس سربراہ اجلاس کا عنوان ’’ مکہ سمٹ :مستقبل کے لیے اکٹھ ‘‘ ہے۔اس کا مقصد اسلامی دنیا کو درپیش مسائل کے پیش نظر ایک مشترکہ مؤقف اختیار کرنا ہے۔

سعودی عرب کے شمال مغربی علاقے تبوک کے گورنر شہزادہ فہد بن سلطان بن عبدالعزیز نے جمعرات کے روز وزیراعظم عمران خان سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے اور ان سے کہا ہے کہ وہ او آئی سی کے سربراہ اجلاس میں شرکت کے لیے ان کے سعودی عرب کے دورے کے منتظر ہیں۔

توقع ہے کہ وزیراعظم عمران خان میزبان شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے علاوہ اسلامی سربراہ کانفرنس میں شرکت کرنے والے دوسرے لیڈروں سے ملاقاتیں کریں گے اور ان سے مسلم اُمہ کو درپیش مسائل کے علاوہ باہمی دلچسپی کے علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

یہ خیال کیا جارہا ہے کہ اس سربراہ اجلاس کے ایجنڈے میں یمن کے حوثی شیعہ باغیوں کے سعودی عرب کے شہروں اور تیل کی تنصیبات پر بیلسٹک میزائلوں اور بغیر پائیلٹ جاسوس طیاروں سے حالیہ حملوں کا معاملہ ،امریکا اور ایران کے درمیان جاری کشیدگی ،شام کی صورت حال ، لیبیا میں خانہ جنگی اور تنازع فلسطین کے حل کے لیے امریکا کے مجوزہ امن منصوبے سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ابھی تک اپنے اس منصوبے کو خفیہ رکھا ہوا ہے لیکن اس کی صدائے بازگشت گذشتہ کئی ماہ سے سنی جارہی ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند