تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
امریکی صدر سے ’احمق‘ اور ’جنگلی‘ کا خطاب پانے والے برطانوی سفیر مستعفی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 18 ربیع الثانی 1441هـ - 16 دسمبر 2019م
آخری اشاعت: بدھ 7 ذیعقدہ 1440هـ - 10 جولائی 2019م KSA 21:02 - GMT 18:02
امریکی صدر سے ’احمق‘ اور ’جنگلی‘ کا خطاب پانے والے برطانوی سفیر مستعفی
برطانیہ کے مستعفی سفیر کِم ڈاروک
واشنگٹن ۔ ایجنسیاں

واشنگٹن میں متعیّن برطانوی سفیر کِم ڈاروک نے اپنے عہدے سے استعفا دے دیا ہے۔انھوں نے یہ فیصلہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے خود کو ’’احمق‘‘ اور ’’جنگلی‘‘ قرار دیے جانے کے بعد کیا ہے۔

امریکی صدر نے برطانوی سفیر کی خفیہ مراسلت شائع ہونے کے بعد انھیں ان ’خطابات‘ سے نوازا تھا۔اس میں انھوں نے امریکی صدر کی انتظامیہ کو نااہل قرار دیا تھا۔

مسٹر کِم کی خفیہ مراسلت ایک برطانوی اخبار میں گذشتہ سوموار کو شائع ہوئی تھی ۔اس پر صدر ٹرمپ نے اپنے سخت غصے کا اظہار کیا ہے اور انھوں نے ٹویٹر پر برطانوی سفیر اور وزیراعظم تھریزامے پر تابڑ توڑ حملے کیے ہیں۔ اس تنازع میں برطانوی وزیراعظم نے اپنے سفیر کی مکمل حمایت کا اظہار کیا تھا۔

کِم ڈاروک نے اپنے استعفے میں لکھا ہے کہ ‘‘ سفارت خانے کی سرکاری دستاویزات افشا ہونے کے بعد میرے عہدے اور بہ طور سفیر میری بقیہ مدت کے بارے میں بہت سی قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں۔ میں ان قیاس آرائیوں کا خاتمہ چاہتا تھا۔ موجودہ صورت حال میں میرے لیے اپنے فرائض منصبی کو انجام دینا ناممکن ہو کر رہ گیا ہے ‘‘۔

تھریزا مے نے ان کے استعفے کے اعلان کے بعد برطانوی دارالعوام میں بتایا کہ انھوں نے مسٹر ڈاروک سے گفتگو کی ہے اور ان سے کہا ہے کہ ’’ یہ بہت ہی افسوس ناک معاملہ ہے کہ وہ واشنگٹن میں بہ طور سفیر اپنے عہدے سے سبکدوشی کو ضروری خیال کررہے ہیں‘‘۔

برطانیہ کے دفتر خارجہ اور دولت ِ مشترکہ میں مستقل انڈر سیکریٹری اور سفارتی سروس کے سربراہ سائمن میکڈونلڈ نے ان کا استعفا منظور کر لیا ہے اور ان کے گذشتہ چند روز کے دوران میں پیشہ ورانہ کردار کی تعریف کی ہے۔ واضح رہے کہ مسٹر کِم دسمبر میں ویسے ہی واشنگٹن میں بہ طور سفیر سبکدوش ہونے والے تھے مگر انھوں نے صدر ٹرمپ سے مزید محاذ آرائی سے بچنے کے لیے قبل از وقت ہی عہدہ چھوڑنے میں عافیت جانی ہے۔
 

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند