تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
ایران کسی ثالث یا اس کے بغیر بھی سعودی عرب سے بات چیت کے لیے تیار
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعرات 7 ربیع الثانی 1441هـ - 5 دسمبر 2019م
آخری اشاعت: ہفتہ 12 صفر 1441هـ - 12 اکتوبر 2019م KSA 18:52 - GMT 15:52
ایران کسی ثالث یا اس کے بغیر بھی سعودی عرب سے بات چیت کے لیے تیار
ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان عباس موسوی
تہران ۔ ایجنسیاں

ایران نے کسی ثالث (ملک) یا اس کے بغیر بھی سعودی عرب کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی ظاہر کردی ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان عباس موسوی نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے دورہ ایران سے قبل یہ بیان دیا ہے۔وہ مبیّنہ طور پر سعودی عرب اور ایران کے درمیان ثالثی کے لیے کوششوں کے ضمن میں اختتام ہفتہ پر ایران کا دورہ کررہے ہیں۔

لیکن عباس موسوی نے ہفتے کے روز ایک بیان میں ہے کہ ’’ میں کسی ثالث سے آگاہ نہیں ہوں۔ البتہ ایران یہ اعلان کرتا ہے کہ وہ کسی ثالث یا اس کے بغیر بھی سعودی عرب سمیت اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ بات چیت کے لیے تیار رہا ہے تاکہ کسی بھی قسم کی غلط فہمیوں کو دور کیا جاسکے۔‘‘

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے بھی اسی ہفتے اس بات کا اشارہ دیا تھا کہ ان کا ملک سعودی عرب کے ساتھ علاقائی امور پر بات چیت کے لیے تیار ہے۔

ایران کے ساتھ جوہری سمجھوتے میں شامل تین یورپی ممالک نے گذشتہ سوموار کو ایک مشترکہ بیان میں کہا تھا کہ یہ اب واضح ہوچکا ہے کہ ایران ہی چودہ ستمبر کو سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر حملوں کا ذمے دار تھا۔انھوں نے ایران پر زور دیا تھا کہ وہ اپنے جوہری اور میزائل پروگرام کے علاوہ علاقائی امور کے بارے میں بات چیت پراتفاق کرے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند