تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
فرانسیسی صدرکی القدس آمد، اسرائیلی پولیس افسروں کو کھری کھری سنا دیں
صدر ماکروں کے ہاتھوں اسرائیلی پولیس کی ڈانٹ ڈپٹ کی ویڈیو وائرل
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

اتوار 11 شعبان 1441هـ - 5 اپریل 2020م
آخری اشاعت: جمعرات 27 جمادی الاول 1441هـ - 23 جنوری 2020م KSA 07:27 - GMT 04:27
فرانسیسی صدرکی القدس آمد، اسرائیلی پولیس افسروں کو کھری کھری سنا دیں
صدر ماکروں کے ہاتھوں اسرائیلی پولیس کی ڈانٹ ڈپٹ کی ویڈیو وائرل
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

فرانسیسی صدر عمانویل ماکروں اسرائیل کے خصوصی دورے پر مشرقی بیت المقدس پہنچ گئے جہاں انہوں نے گذشتہ روز ایک چرچ میں بھی حاضری دی۔ اس موقع پر فرانسیسی صدر اور اسرائیلی پولیس کے درمیان نوک جھونک بھی دیکھی گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صدر عمانویل ماکروں نے چرچ کے اندر آنے والے ایک اسرائیلی پولیس اہلکار کو چلاتے ہوئے اس کی سرزنش کی اور اسےگرجا گھر سے باہر نکال دیا۔

فرانسیسی "بی ایف ایم ٹی وی" ویب سائٹ نے بتایا ہے کہ یہ واقعہ فرانس کی ملکیت والی سینٹ این چرچ کے داخلی دروازے پر اس وقت پیش آیا جب اسرائیلی پولیس کے ایک افسر نے چرچ میں داخل ہوا تاہم بعد ازاں واپس آگیا۔ وہ افسر دوبارہ داخل ہوا صدر ماکروں نے اسے چلاتے ہوئے وہاں سے دفع ہوجانے کو کہا۔ اس موقعے پر فرانسیسی صدر کے محافظوں نے اسرائیلی پولیس اہلکاروں کو وہاں سے باہر نکال دیا۔ فرانسیسی صدر اور اسرائیلی پولیس افسر کے درمیان تو تکرار بھی ہوئی۔

فرانسیسی صدر کا کہنا تھا کہ اسرائیلی پولیس اہلکار نے چرچ کے تقدس کا احترام نہیں کیا۔ جب پولیس اہلکار میرے سامنے آیا تو میں نے اسے ڈانٹ دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ دوسرے کومشتعل کرے۔ ہمیں ان قوانین اور اصولوں کا احترام کرنا چاہیے جو صدیوں سے چل رہے ہیں۔

خیال رہے کہ فرانسیسی صدر عمانویل ماکروں اور اسرائیلی پولیس میں جھڑپ نے ماضی کے ایک ایسے ہی دوسرے واقعے کی یاد تازہ کردی۔ 22 اکتوبر 1996ء کو آنجہانی فرانسیسی صدر یاک شیراک مشرقی بیت المقدس کے دورے پر آئے تو ان کی بھی اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ساتھ ایسی ہی ایک جھڑپ ہوئی تھی۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند