تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
کرونا وائرس : مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام کی تیسری توسیع کی بندش
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 9 شوال 1441هـ - 1 جون 2020م
آخری اشاعت: بدھ 30 رجب 1441هـ - 25 مارچ 2020م KSA 22:50 - GMT 19:50
کرونا وائرس : مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام کی تیسری توسیع کی بندش
العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام کی تیسری توسیع کو بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔

الحرمین الشریفین کے امور کے ذمے دار ادارے (پریزیڈینسی) کے سربراہ شیخ عبدالرحمان بن عبدالعزیز السدیس نے بدھ کو اس اقدام کا اعلان کیا ہے اور متعلقہ حکام کو مسجد الحرام کی تیسری توسیع کو بند کرنے کا حکم دیا ہے۔

جنرل پریذیڈینسی نے سعودی عرب میں کرونا وائرس پھیلنے کے بعد سے الحرمین الشریفین میں زائرین کے تحفظ کے لیے ایک بڑے پیکج پر کام شروع کردیا تھا۔اس کے تحت پہلے کعبۃ اللہ (مسجد الحرام) میں عمرے پر پابندی عاید کردی گئی تھی اور حال ہی میں مسجد الحرام کے تمام ذیلی دروازوں کو بند کردیا گیا ہے۔

مسجد الحرام اور مسجد النبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے ائیرکنڈیشننگ اور ہوا کے نظاموں کی صفائی ستھرائی کے کام کو تیز کردیا گیا ہے۔مسجد الحرام کی بالائی چھت اور تہ خانے کو بند کیا جاچکا ہے اور الحرمین الشریفین میں کام کرنے والے خادمین کی تعداد میں بھی کمی کردی گئی ہے۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے بدھ کو مملکت میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کئی ایک نئے اقدامات کی منظوری دی ہے۔ان کے تحت سعودی عرب کے تیرہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے مکینوں پر سفری پابندی عاید کردی گئی ہے۔مکہ مکرمہ ، مدینہ منورہ اور دارالحکومت الریاض میں مقیم افراد پر ان شہروں سے باہر جانے یا ان میں داخل ہونے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ان شہروں میں سوموار کو اعلان کردہ کرفیو کا دورانیہ بھی بڑھا دیا گیا ہے۔اب اس کرفیو کا آغاز شام سات بجے کے بجائے سہ پہر تین بجے ہوا کرے گا اور یہ صبح چھے بجے تک جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے 2015ء میں مسجد الحرام کی تیسری توسیع کا افتتاح کیا تھا۔اس کے تحت مسجد الحرام کی مرکزی عمارت کو مشرق کی سمت بہت وسیع کیا گیا ہے۔ ،مسعیٰ (صفا اور مروہ کے درمیان سعی کرنے کی جگہ) کو وسیع کیا گیا ہے اور اس کی منزلیں بڑھا دی گئی ہیں۔

اس توسیع کے تحت حالیہ برسوں کے دوران میں مسجد الحرام سے ملحقہ فلائی اوور ، سیڑھیاں ،مرکزی خدمات کی عمارت،اسپتال زائرین کے استعمال کے لیے سرنگیں ،مسجد کی جانب آنے والے پُل تعمیر کیے گئے ہیں۔

مسجدالحرام کی عمارت کا کل رقبہ 1470000 مربع میٹر ہے اور توسیعی رقبہ 32000 مربع میٹر ہے۔یوں اس حصے میں تین لاکھ عبادت گزار بیک وقت نماز ادا کرسکتے ہیں۔اس سے ملحقہ رقبہ 17500 مربع میٹر ہے اور وہاں 280000 نمازی سما سکتے ہیں۔

تیسری توسیع کے بعد صفا اور مروہ کے درمیان مسعیٰ کے رقبہ میں 57000 مربع میٹر کا اضافہ ہوا ہے اور وہاں 70000 نمازی سما سکتے ہیں اور ایک گھنٹے میں قریباً 118000 افراد سعی کرسکتے ہیں۔اس سے پہلے مسعیٰ میں ایک گھنٹے میں 44000 افراد سما سکتے تھے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند