تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
عراق کی ایران کے خلاف سلامتی کونسل میں شکایت
عراق میں امریکی اڈوں پر ایرانی میزائل حملوں کی مذمت
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 2 رجب 1441هـ - 26 فروری 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 15 جمادی الاول 1441هـ - 11 جنوری 2020م KSA 07:11 - GMT 04:11
عراق کی ایران کے خلاف سلامتی کونسل میں شکایت
عراق میں امریکی اڈوں پر ایرانی میزائل حملوں کی مذمت
عراق میں موجود امریکی فوجی۔ [فائل فوٹو]
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

'العربیہ' نیوز چینل اور اس کے برادر ٹیلی ویژن الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ جمعہ کے روز عراق نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایران کے خلاف شکایت کی ہے۔ عراق نے اپنی سرزمین پر موجود امریکی فوجی اڈوں پر ایرانی میزائل حملوں کو مسترد کر دیا ہے۔

نامہ نگار کے مطابق عراق کی طرف سے سلامتی کونسل کو ایک مکتوب بھیجا گیا ہے جس میں ایران کے بارے میں شکایت کی گئی ہے۔ مکتوب میں کہا گیا ہے کہ ایران نے اپنے دفاع کا بہانہ بنا کر عراقی سرزمین پر بمباری جو کہ قطعا ناقابل قبول ہے اور اچھی ہمسائیگی کے اصولوں کے منافی ہے۔

عراق کی طرف سے کی گئی شکایت میں بغداد کوعلاقائی یا بین الاقوامی تنازعات کا میدان بنانے کی مذمت کی گئی ہے۔

عراق کے عبوری وزیر اعظم عادل عبد المہدی نے جمعہ کو ایک بیان میں الانبار میں عین الاسد اور اربیل میں 'الحریر' فوجی اڈوں پر ایرانی کے میزائل حملے عراق کی خود مختاری کی خلاف ورزی ہے۔

خیال رہے کہ تین جنوری کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب امریکا نے ایرانی پاسداران انقلاب کے ایک سینیر جنرل قاسم سلیمانی اور عراقی الحشد ملیشیا کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس کی ہلاکت کے بعد امریکا اور عراق میں کشیدگی کے ساتھ ساتھ تہران اور بغداد میں بھی تنائو پایا جا رہا ہے۔

عراق نے اپنی سرزمین پرجہاں ایرانی جنرل کی امریکی فوج کے ہاتھوں ہلاکت کی مذمت کی ہے وہیں عراق نے اپنے ہاں قائم امریکی فوجی اڈوں پر ایرانی میزائل حملوں کو بھی عراق کی خود مختاری اور سلامتی کے خلاف قرار دیا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند