تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
سعودی طالب علم نے حرم مکی کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھنے کا طریقہ ایجاد کر لیا
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 14 شعبان 1441هـ - 8 اپریل 2020م
آخری اشاعت: اتوار 21 جمادی الثانی 1441هـ - 16 فروری 2020م KSA 10:00 - GMT 07:00
سعودی طالب علم نے حرم مکی کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھنے کا طریقہ ایجاد کر لیا
دبئی – العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب میں ایک طالب علم نے ایسا پروجیکٹ تیار کیا ہے جس کا مقصد حرم مکی کو "کرونا" سمیت ہر قسم کے وائرس سے محفوظ رکھنا ہے۔

سعودی طالب علم عبدالرحمن آل الشیخ کے مطابق ان کے پروجیکٹ کا نام "الحج الآمن" (محفوظ حج) ہے۔ یہ پروجیکٹ حرم مکی اور اس کے زائرین کو ہر قسم کے وائرس اور انفیکشن کی منتقلی سے محفوظ رکھے گا۔

عبدالرحمن نے واضح کیا کہ یہ پروجیکٹ

UVGI برقی مقناطیسی شعاؤں پر مبنی ہے۔ ان شعاؤں کو حرم مکی کی چھت اور فرش پر وائرس کو مارنے کے واسطے استعمال کیا جائے گا۔ یہ استعمال ایک مقررہ درجہ حرارت پر ہو گا جو انسان یا جانور کے لیے نقصان دہ نہیں ہو گا۔

سعودی طالب کے مطابق مذکورہ شعاؤں کو حرم مکی کے نزدیک ایک متعین مقدار میں پھیلایا جائے گا۔ اس طرح کہ وہ حرم کے فرش پر پھیل جائے اور باریک سے باریک جرثوموں اور وائرس کو ختم کردے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند