الفقع: سعودی عرب کی مزیدار سبزی، خریدو فروخت عروج پر پہنچ گئی

ایک صحرائی پودا جو فنگس کی سب سے لذیذ اور قیمتی اقسام میں سے ایک سمجھا جاتا ، دیگر ملکو ں میں اس کے نام مختلف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فقع کہیں یا کماۃ ، اس سے فرق نہیں پڑتا، یہ دونوں نام ایک ہی پودے کے ہیں۔ اس پودے کی کاشت سعودی عرب میں ان دنوں عروج پر پہنچ چکی ہے۔ سردیوں کےموسم کے بعد الفقع کی کاشت سعودی عرب میں شروع ہوجاتی ہے اور اسے بڑے پیمانے پر کاشت کیا جاتا ہے۔ یہ سعودی عرب کی مشہور و معروف سبزی ہے جسے بڑے شوق سے کھایا جاتا ہے۔یہ ایک فنگل پودا ہے جو مٹی میں اگتا ہے اور بعض عرب ممالک میں کھایا جاتا ہے۔

آپ کے ملک میں اسے کیا کہتے ہیں؟

تاہم ہر ملک کا اپنا الگ نام ہے۔سعودی عرب میں اسے ’’ الفقع‘‘ کہا جاتا ہے۔ شام میں اسے ’’الکماۃ‘‘ اور دارجہ لہجے میں ’’کمایہ‘‘ کہتے ہیں۔ سوڈان میں اس کا نام ’’ العبلاج‘‘ بن جاتا ہے۔ مصر اور مغرب کے عرب ملکو ں میں اس کا نام ’’ الترفاس‘‘ ہے۔ الفقع کو صحرائی کھمبیوں کی سب سے لذیذ اور قیمتی اقسام میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔

سعودی عرب کی شمالی سرحدوں پر واقع سب سے بڑے شہر ’’ عرعر‘‘ اس ’’الفقع ‘‘ کا سب سے بڑا مرکز سمجھا جاتا ہے۔ یہاں ’’ الفقع‘‘ کی مارکیٹ نے عرب شہریوں اور سیاحوں کی بڑھتی ہوئی مانگ کے درمیان اس کی خرید و فروخت میں نمایاں اضافہ دیکھا گیا ہے۔ خلیجی ریاستوں کے افراد بھی خطے کی مشہور فصل خریدنے کے لیےیہاں آتے ہیں۔ اس مارکیٹ میں ’’ الفقع‘‘ کی متعدد اقسام دستیاب ہیں۔

فروخت کنندگان میں سے ایک نے سعودی پریس ایجنسی کے ساتھ ایک انٹرویو میں بتایا کہ مارکیٹ میں گزشتہ دو ہفتوں کے دوران بڑی مقدار میں سپلائی دیکھنے میں آئی ۔ سیزن کے اختتام تک متوقع مہینے کے دوران مانگ میں مسلسل اضافہ ہوا ہے۔ اس مزید ار سبزی کو بولی لگا کر فروخت کیا جاتا ہے۔

پیداوار کے لیے صبر اور تجربہ درکار

مارکیٹ میں 10 کلو گرام وزنی ’’الفقع ‘‘کے ایک تھیلے کی قیمت 800 ریال (213 ڈالر) سے 1500 ریال (400 ڈالر) کے درمیان ہوتی ہے۔ قیمت کا انحصار ’’ الفقع‘‘ کے سائز اور قسم پر ہوتا ہے۔ اس کی قیمتیں اس کی ظاہری شکل کے اعتبار سے زیادہ لگتی ہیں۔ قیمت کا تعلق عام طور پر بارش کی مقدار سے بھی مختلف ہو سکتا ہے۔

سعودی عرب میں ’’الفقع‘‘ کے نام سے معروف اس کھمبی یا ٹرفل کو پیداوار کو حاصل کرنے میں بہت محنت درکار ہوتی ہے۔ اسے جمع کرنے کے عمل میں ایک طویل وقت لگتا ہے۔ ان ٹرفلز کی تلاش میں اس جگہ تک پہنچنے کے لیے صبر اور تجربے کی ضرورت ہوتی ہے جہاں یہ پھیلتا ہے۔ زمین کے نیچے اس کھمبی کی موجودگی کا پتہ زمین کے اوپر ’’الرقروق‘‘ پودے کے پتوں سے ہوجاتی ہے۔ اس کو زمین سے نکالنے کے لیے طلوع آفتاب یا غروب آفتاب پر توجہ مرکوز کرنا ہوتی ہے کیونکہ ان دونوں اوقات میں زمین میں دراڑیں زیادہ نظر آتی ہیں۔ ان دراڑوں کے باعث ٹرفلز کو تلاش کرنا اور انہیں زمین سے نکالنا آسان ہو جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں