رباط: ملکی سکیورٹی کے انتظامات موثر کرنے کا اعلان

شام و عراق میں جہادیوں سے ملکی سلامتی کو خطرہ ہے: وزیر داخلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مراکش نے شام و عراق کے جہاد میں اپنے شہریوں کی شرکت کے پیش نظر ملک کے اندر خطرات بڑھ جانے پر سکیورٹی اقدامات بڑھانے کا اعلان کیا ہے۔ تاکہ شہریوں کا تحفظ یقینی بنایا جا سکے۔

وزیر داخلہ نے اس بارے میں کہا ہے کہ مملکت کو دہشت گردوں سے سخت خطرات لاحق ہو گئے ہیں، کیونکہ مراکش کے شہری شام اور عراق میں جہاد کے لیے بڑی تعداد میں جا رہے ہیں۔''

وزیر داخلہ نے کابینہ کو ملکی سلامتی کے لیے موجود خطرات کے بارے میں بریف کرتے ہوئے کہا '' ان جنگجووں کی ایک خاص تعداد ایسے لوگوں پر مشتمل ہے جو آئندہ دنوں مراکش کو بھی اپنے ہدف کے طور پر رکھیں گے۔

اس لیے رباط اپنی سکیورٹی کو موثر بنانے کے اقدامات کر رہا ہے۔''کاسابلانکا ائیر پورٹ اور دوسری جگہوں پر سکیورٹی انتظامات سخت کیے جا رہے ہیں۔ تاہم وزیر داخلہ نے ان سکیورٹی اقدامات کی تفصیل نہیں بتائی ہے۔

وزیر داخلہ کے حوالے سے ترجمان نے بتایا '' اپنے شہریوں کی حفاظت، اور تذویراتی اہمیت کے سرکاری اداروں کی سکیورٹی ملکی تجارتی اور اقتصادی سرگرمیوں پر سمجھوتا کیے بغیر یقینی بنائی جا رہی ہے۔''

اس سے پہلے متعدد مرتبہ مراکشی حکام جہادیوں کے مختلف گروپوں اور ٹھکانوں کے خلاف کارروائیاں کرنے کا دعوی کر چکے ہیں۔ 2011ء سے 2013ء کے درمیان ایسی اٹھارہ کارروائیاں کی گئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں