.

ترکی : سالِ نو پر حملوں کی سازش،داعش کے دو مشتبہ جنگجو گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترک پولیس نے دارالحکومت انقرہ میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش سے تعلق رکھنے والے دو خودکش بمباروں کو گرفتار کر لیا ہے۔ وہ نئے سال کے آغاز کے موقع پر حملے کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔

ترکی کے ایک عہدے دار نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بدھ کے روز بتایا ہے:''ان کے بارے میں شُبہ ہے کہ وہ داعش سے تعلق رکھتے ہیں اور وہ سالِ نو کے آغاز پر انقرہ میں حملے کی سازش کررہے تھے''۔

ترکی کے ایک نجی ٹیلی ویژن چینل این ٹی وی کی اطلاع کے مطابق انسداد دہشت گردی پولیس نے ان دونوں افراد کو انقرہ کے نواح میں واقع علاقے مامک سے گرفتار کیا ہے۔

واضح رہے کہ 10 اکتوبر کو انقرہ میں دو خودکش بم دھماکوں کے بعد سے ترکی میں سکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔کرد نواز کارکنوں کی ریلی پر ان دونوں بم حملوں میں ایک سو تین افراد ہلاک ہوگئے تھے۔جدید ترکی کی تاریخ میں یہ دہشت گردی کا سب سے تباہ کن واقعہ تھا۔

اس حملے کا داعش پر الزام عاید کیا گیا تھا۔قبل ازیں ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں اس سال کے وسط میں دو اور تباہ کن بم دھماکے ہوئے تھے اور داعش پر ان دونوں حملوں میں ملوث ہونے کا الزام عاید کیا گیا تھا۔ان واقعات کے بعد ترک حکام نے مشتبہ دہشت گردوں کے مبیّنہ ''سلیپر'' سیلوں کے خلاف کارروائی کی تھی اور اس دوران متعدد مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔