.

کُتےبھی ڈونلڈ ٹرمپ کی زبان جانتے ہیں:ویڈیو

ٹرمپ نے پریس کانفرنس میں صحافی سے کہا ’بیٹھ جاؤ، کتے بیٹھ گئے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی سابق صدور کی طرح پالتو جانوروں کتوں، بیلیوں اور گھوڑوں کے دلدادہ ہیں یا نہیں۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اس سوال کا کھوج لگانے کی کوشش کی تو پتا چلا کہ ٹرمپ کتوں کے دلدادہ ہوں یا نہ ہوں مگر کتے ڈونلڈ ٹرمپ کی زبان سمجھتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو ’’گوگل‘‘ پر ڈونلڈ ٹرمپ کے پالتو جانوروں سے متعلق سوال کے جواب میں ایک عجیب ویڈٰیو ہاتھ لگی جس میں کسی مکان میں ٹی وی اسکرین کے سامنے بیھٹے ایک شخص کے ہمراہ اس کے چار کتے بھی دکھائے گئے ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ ایک نیوز کانفرنس کے دوران میکسیکو کے ایک صحافی کو’’ Sit Down‘‘ کہتے ہیں تو میلوں دور اسکرین پر دیکھنے والے کتے بھی ٹرمپ کے حکم پر بیٹھ جاتے ہیں۔

اس واقعے کی تفصیل یہ ہے کہ کئی ماہ قبل ڈونلڈ ٹرمپ نے واشنگٹن میں اپنی انتخابی مہم کے دوران ایک نیوز کانفرنس کا انعقاد کیا۔ اس موقع پر مقامی اور غیرملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے درمیان میکسیکو کے ٹی وی چینل Univision کے نامہ نگار اور میکسیکو کے شہری جارج راموس بھی موجود تھے۔ جارج راموس کے ساتھ ڈونلڈ ٹرمپ کی پہلے سے مخاصمت چلی آرہی تھی، کیونکہ راموس نے اپنی کئی ٹی وی رپورٹس میں ٹرمپ کو متعصب اور نسل پرست قرار دینے کے ساتھ ساتھ ان پر کڑی تنقید کی تھی۔

یہی وجہ ہے کہ واشنگٹن میں منعقدہ نیوز کانفرنس میں جارج راموس کی موجودگی ٹرمپ پر سخت گراں گذری۔ معاملہ اس وقت زیادہ شدت اختیارکرگیا جب راموس نے ٹرمپ سے سوالات پوچھنا شروع کیے۔ ٹرمپ نے پہلے سوال پر جارج راموس کو کہاSit Down مگر اس نے اپنا سوال دہراہا۔ ٹرمپ نے زیادہ غصے میں پھر کہا کہ Sit Down۔ اس بار بھی جارج راموس نے اپنا سول دہرانے کے ساتھ کہا کہ وہ کسی بھی دوسرے صحافی کی طرح آپ سے سوال پوچھنے کا حق رکھتا ہے۔

ٹرمپ نے نہایت غصے اور جذباتی لہجے میں الفاظ کو کھینچتے ہوئے کہا Siiit Doooown۔ کسی نامعلوم مقام پر ڈونلڈ ٹرمپ کی نیوز کانفرنس ایک گمنام امریکی شہری اپنے چار کتوں کے ہمراہ دیکھ رہا تھا۔ ویڈیو میں کتے بھی ٹرمپ کو دیکھ اور سن رہے تھے۔ ٹرمپ کے ترش لہجے کا میکسیکو کے ٹی وی چینل کے نامہ نگار جارج راموس پر تو کوئی اثر نہ ہوا البتہ دور ایک گھر میں موجود کتے ٹرمپ کی طرف سے ’’ Sit Down‘‘ کے الفاظ کو سمجھ گئے اور ان میں سے دو کتے ٹرمپ کے الفاظ سنتے ہی بیٹھ گئے۔ یہ ویڈٰیو بنانے والے امریکی شہری کی شناخت ظاہر نہیں ہوسکی تاہم یہ پتا چلا ہے کہ وہ خود انگریزی بولتا ہے اور اس نے اپنے کتوں کو بھی سکھا رکھا ہے کہ جب وہ انہیں Sit Down کہے تو وہ بیٹھ جائیں۔ مالک یا کوئی دوسرا شخص کتوں کو Sit Dwon کہے تو وہ بیٹھ جاتے ہیں۔ اس طرح کتوں نے ٹرمپ کی زبان سمجھی اور اس کے کہنے پر بیٹھ گئے۔ ٹرمپ نے جارج راموس کو سوال نہیں کرنے دیا اور اپنے قریب کھڑے ایک پولیس اہلکارکی مدد سے اسے کانفرنس ہال سے باہر نکال دیا گیا تھا۔

ٹرمپ اور گھوڑا

حالیہ انتخابی مہم کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے کئی اقسام کے کتوں کے ہمراہ دیکھا گیا ہے مگر یہ بھی پتا چلا ہے کہ تھیوڈر روزویلٹ سے لے کر باراک اوباما تک تمام امریکی صدور ایوان صدر میں کتوں اور بلیوں کے ساتھ دل بہلاتے رہے ہیں مگر ڈونلڈ ٹرمپ کتوں کے بغیر ہی وقت گذاریں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے سنہ 1988ء میں ایک گھوڑا بھی خرید کیا تھا۔ یہ گھوڑا گھوڑ دوڑ کے مقابلوں میں شامل رہا ہے۔ Alibi نامی اس گھوڑے کو ڈونلڈ ٹرمپ نے DJ Trump کا نام دے رکھا تھا۔ اس نے پانچ لاکھ ڈالر میں گھوڑا فروخت کرنے کی ڈیل کی تھی مگر بعد ازاں بہ وجوہ اس کی قیمت کم کردی گئی۔