’’شاہراہ ِمکہ اقدام‘‘ سے عازمینِ حج کا سعودی عرب میں داخلہ آسان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

سعود ی عر ب نے عازمینِ حج کے حجاز ِمقدس میں باسہولت پہنچنے کے لیے حال ہی میں شاہراہِ مکہ اقدام کا آغاز کیا ہے اور سب سے پہلے انڈونیشیا اور ملائشیا سے تعلق رکھنے والے عازمینِ حج نے اس سہولت سے استفادہ کیا ہے۔

سعودی عرب کے ڈائریکٹر جنرل پاسپورٹس اور شاہراہ مکہ اقدام کے سربراہ میجر جنرل سلیمان عبدالعزیز الیحییٰ کا کہنا ہے کہ ’’اگر کوئی بھی ملک اس اقدام سے استفادہ کرنا چاہتا ہے تو سعودی مملکت اس سے تعلق رکھنے والے عازمینِ حج کو اس کے تحت خدمات مہیا کرے گی‘‘۔

اس اقدام کے تحت عازمینِ حج کو ان کو مقام روانگی پر ہی امیگریشن کی کلیرینس کردی جائے گی۔اس خدمت کا گذشتہ ہفتے سب سے پہلے ملائشیا کے دارالحکومت کوالالمپور کے بین الاقوامی ہوائی اڈے سے آغاز کیا گیا تھا اور وہاں سے دو پروازیں عازمین حج کو لے کر سعودی عرب روانہ ہوئی تھیں۔ اس کے بعد انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ کے سوئیکارنو حاتا بین الاقوامی ہوائی ڈے پر یہ سہولت مہیا کی گئی ہے۔

اس کے آغاز کے موقع پر میجر جنرل سلیمان عبدالعزیز الیحییٰ ، انڈونیشیا میں سعودی سفیر اسامہ محمد الشعیبی اور انڈونیشی حکام موجود تھے۔انھیں اس سسٹم کے نفاذ اور آپریشن کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔انھوں نے اس مربوط الیکٹرانک نظام کے تجربے سے گزرنے والے انڈونیشی اور ملائشی عازمین ِ حج سے بھی ملاقات کی۔

ملائشیا اور انڈونیشیا میں اس نظام کو متعارف کا فیصلہ ان دونوں ممالک سے عازمین حج کی ایک بڑی تعداد کے پیش نظر کیا گیا ہے۔سعودی حکام آیند ہ برسوں کے دوران میں اس کو دوسرے ممالک میں بھی متعارف کرانے پر غور کررہے ہیں ۔واضح رہے کہ گذشتہ سال دوسرے ممالک سے ساڑھے سترہ لاکھ حجاج کرام کی سعودی عرب میں آمد ہوئی تھی۔

سعودی عرب کے نائب وزیر حج اور عمرہ ڈاکٹر حسین الشریف کا کہنا ہے کہ ’’عازمین حج کے مفاد میں اس اقدام پر عمل درآمد جاری رہے گا‘‘۔ شاہراہِ مکہ اقدام کے تحت جو سعودی ادارے عازمین حج کو خدمات مہیا کررہے ہیں،ان میں وزارتِ داخلہ ، وزارتِ حج اور عمرہ ، خارجہ امور اور صحت کی وزارتیں ، جنرل اتھارٹی برائے سول ایوی ایشن ، سعودی کسٹمز اور قومی اطلاعاتی مرکز شامل ہیں۔

اس کے تحت عازمین کو سعودی عرب میں قیام کے لیے ویزے کے اجرا ، کسٹمز اور پاسپورٹ کی کلیرینس ، سامان کی تقسیم اور علاحدگی،ٹرانسپورٹ اور رہائش کے انتظامات کی سہولت مہیا کی جارہی ہے۔سعودی عرب میں روانگی سےقبل ان خدمات سے نہ صرف عازمین بآسانی حجاز ِمقدس پہنچ سکیں گے بلکہ وہ مکہ اور مدینہ میں وقت کے ضیاع کے بغیر سیدھے اپنی قیام گاہوں میں پہنچ سکیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں