.

کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے عالمی ادارہ صحت نے ایمرجنسی نافذ کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عالمی ادارہ صحت نے اعلان کیا ہے کہ تیزی کے ساتھ دنیا میں پھیلنے والے مہلک کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے ہنگامی حالت نافذ کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ 'کرونا وائرس' چین میں ظاہر ہوا جس کے بعد یہ دنیا کے کئی ممالک میں پھیل چکا ہے۔ اس وائرس کی روک تھام، علاج اور وائرس کے خاتمے کے لیے عالمی ادارہ صحت نے ہنگامی حالت کے نفاذ کا اعلان کیا ہے۔

صحت کی عالمی تنظیم کے ڈائریکٹر جنرل ٹائڈروس ادھانوم نے اس فیصلے کا اعلان ’’ڈبلیو ایچ او‘‘ کی ایمرجنسی کمیٹی کے اجلاس کے بعد کیا۔ اجلاس میں صحت کے ماہرین نے شرکت کی، جس میں بتایا گیا کہ کرونا وائرس اب تک دنیا کے 18 ملکوں میں پھیل چکا ہے اور اس کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 213 تک پہنچ گئی ہے۔ سب سے زیادہ جانی نقصان چین میں ہوا ہے۔

ٹائڈروس نے جنیوا میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ ہفتوں میں کرونا وائرس کی شکل میں ایک ایسی وبا پھیلی ہے جس نے تیزی کے ساتھ پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہماری سب سے بڑی تشویش یہ ہے کہ کرونا سے نمٹنے کے لیے دنیا کے پاس کوئی مناسب حفاظتی انتظام نہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اس وباء سے نمٹنے کے لیے ہنگامی کا نفاذ کیا جاتا ہے۔