’بچہ 7 سیکیورٹی بیریئرعبور کرکے ہوائی جہاز تک جا پہنچا اور کسی کو خبر تک نہیں‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

دنیا بھر میں ہوائی اڈوں پر سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کیے جاتے ہیں مگر عراق کے نجف شہر کے ایک بین الاقوامی ہوائی اڈے پرموجود سیکیورٹی عملے کی غفلت کے باعث ایک 10 سالہ بچہ سات سیکیورٹی چیک پوسٹیں عبور کرکے ایران جانے والے جہاز پربھی چڑھ گیا مگر کسی کو خبر تک نہیں ہوئی۔

جنوبی عراق کے نجف ہوائی اڈے کے حکام نے بدھ کوبتایا کہ وہ بچے کے ہوائی اڈے میں داخلے کے واقعے کے بعد حفاظتی طریقہ کار پر نظر ثانی کررہے ہیں۔ حکام کا کہنا تھا کہ ایک دس سالہ بچہ آسانی کے ساتھ سات چیک پوسٹوں سے گذر کر رن وے تک چلا گیا اور ہوائی جہاز پر بھی چڑھ گیا۔ یہ حیران کن ہے اور پرلے درجے کی غفلت کا ثبوت ہے۔

یہ واقعہ پیر کی رات اس وقت پیش آیا جب نجف کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے ڈائریکٹر حکمت احمد نے اے ایف پی کو بتایا کہ ایک بچہ ہوائی اڈے میں داخل ہونے سے قبل سات چیک پوسٹوں سے گذرا اور ہوائی اڈے پرایران جانے والی ایک پرواز میں بھی داخل ہوگیا۔ انہوں نے اس واقعے کی تحقیقات کا اعلان کیا ہے۔

نجف ہوائی اڈہ عراق کا دوسرا سب سے بڑا ایئرپورٹ ہے، کیونکہ یہاں ہر سال لاکھوں زائرین آتے ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 2019 میں کرونا وبا سے پہلے اس ہوائی اڈے پر 25 لاکھ مسافر آئے۔

پیرکی شام ایک غیر معمولی مسافر ہوائی اڈے پر سیکیورٹی چوکیوں سے گزرا۔ حکمت احمد نے بتایا کہ ایک 10 سالہ لڑکا ہوائی اڈے کے اندر موجود 7 چوکیوں کو عبور کرکے جہاز تک پہنچا جہاں طیارے کے سیکیورٹی گارڈ نے اسے روکا۔

انہوں نے مزید کہا کہ لڑکا پیر کی شام ساڑھے نو بجے ہوائی اڈے میں داخل ہوا۔ منگل کی صبح تقریباً دو بجے ایرانی ایئرلائن کے طیارے میں سوار ہونے کے بعد طیارے کے عملے نے اس کی اطلاع دی۔"

حکمت احمد نے مزید کہا کہ فی الحال تحقیقاتی کمیٹیاں اس واقعے کی حقیقت جاننے کے لیے کام کر رہی ہیں۔ اس کی روشنی میں اس واقعے میں کام کرنے میں ناکام رہنے والے تمام افراد کو سزا دی جائے گی اور انہیں کام سے ہٹایا جا سکتا ہے۔

احمد نے ایک بیان میں کہا کہ تحقیقات مکمل ہوتے ہی ہوائی اڈے اور مسافروں کے نظم و نسق کو برقرار رکھنے کے لیے نئے طریقہ کار تیار کیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں