پوٹین نے شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ اوپیک پلس معاہدہ پر تبادلہ خیال کیا: روس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

کریملن نے بتایا ہے کہ روسی صدر ولادیمیر پوٹین نے جمعہ کو ایک ٹیلی فون کال میں سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ بات چیت کی۔ اس گفتگو میں انہوں نے تیل کی پیداوار کو محدود کرنے کے لیے اوپیک پلس معاہدے پر بھی تبادلہ خیال کیا ہے۔

کریملن نے کال کے ایک ریڈ آؤٹ سے متعلق بتایا کہ دونوں نے تیل کی عالمی منڈی میں استحکام لانے کے لیے دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کی سطح پر اطمینان کا اظہار کیا۔ پوتین اور ولی عہد کے درمیان قریبی کاروباری تعلقات بھی قائم ہوئے ہیں۔

کریملن نے بتایا کہ بات چیت دوستانہ انداز میں آگے بڑھی۔ یہ گفتگو تعمیری اور معلوماتی تھی۔ اس میں تعاون کے مخصوص شعبوں میں رابطے بڑھانے پر اتفاق کیا گیا۔

واضح رہے پیٹرولیم برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم (OPEC) نے 2016 میں تیل کی منڈی پر قریبی بات چیت کرنے کے لیے روس کی قیادت میں دوسرے بڑے پروڈیوسرز کے ساتھ اوپیک پلس کے نام سے ایک اتحاد قائم کیا تھا۔ اس ماہ کے شروع میں اوپیک پلس نے ایک حیران کن اقدام کیا اور روزانہ تقریباً 1.16 ملین بیرل تیل کی پیداوار میں مزید کمی کا اعلان کردیا۔

سعودی خبر رساں ادارے ’’ایس پی اے‘‘ کے مطابق سعودی ولی عہد اوروزیراعظم شہزادہ محمد بن سلمان نے جمعہ کو روسی صدر پوٹین سے ٹیلیفون پر رابطہ کیا۔ روسی صدر نے رابطے کے آغاز میں شہزادہ محمد بن سلمان کو عید الفطر کی مبارک باد پیش کی۔ دونوں رہنماؤں نے سعودی عرب اور روس کے دوطرفہ تعلقات اور مختلف شعبوں میں انہیں جدید خطوط پر استوار کرنے کی تدابیر کا جائزہ لیا۔ باہمی دلچسپی کے متعدد مسائل پر نقطہ ہائے نظر کا بھی تبادلہ کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں